Tag Archives: بوجھ

مصباح الحق کو تمام فارمیٹس میں کوچنگ کی ذمہ داری دے کر بوجھ لاد دیا گیا، رمیز راجہ

کراچی(این این آئی) سابق پاکستانی کپتان رمیز راجہ نے کہا ہے کہ مصباح الحق کو تمام فارمیٹس میں کوچنگ کی ذمہ داری دے کر بوجھ لاد دیا گیا ہے۔ ایک انٹرویو میں رمیز راجہ نے کہاکہ مصباح الحق کو تمام فارمیٹس میں کوچنگ کی ذمہ داری دے کر بوجھ لاد دیا گیا ہے، میں سمجھتا ہوں کہ ٹوئنٹی 20 کھلاڑیوں کی سمت درست کرنے کیلگے ہارڈ ہٹر کوچ کی ضرورت ہے، انھوں نے کہا کہ پرانے
کھلاڑیوں کو واپس لایا گیا جو دباؤ میں پرفارم نہیں کرپائے، بابر اعظم سے اوپننگ کرانا درست نہیں تھا۔سرفراز احمد اچھی فارم میں نہیں، ان

کی جگہ حارث سہیل کو چوتھے نمبر پر بھیجنا چاہیے تھا، رمیز نے کہا کہ مختصر ترین فارمیٹ میں نوجوان کھلاڑیوں کو سامنے لانے کی ضرورت ہے، ہم نے دوسرے ٹی 20 میں صرف 2 چھکے جڑے جبکہ حریف سائیڈ کی اننگز میں 8 سکسرز شامل تھے۔



[ad_2]

جنوبی افریقہ بلے باز بیورن ہینڈرکس سے جان بوجھ کر نامناسب طریقے سے ٹکرانے پر آئی سی سی کی بھارتی کپتان ویرات کو وارننگ جاری

دبئی (این این آئی)انٹرنیشنل کرکٹ کونسل(آئی سی سی) نے جنوبی افریقہ کے خلاف ٹی20 میچ میں ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر بھارتی ٹیم کے کپتان ویرات کوہلی کی سرزنش کی ہے۔بنگلورو میں کھیلے گئے میچ میں کوہلی جنوبی افریقہ بلے باز بیورن ہینڈرکس سے جان بوجھ کر نامناسب طریقے سے ٹکرائے تھے جس پر آئی سی سی نے ان کی سرزنش کی۔کوہلی کو وارننگ جاری کرتے ہوئے ایک ڈی میرٹ پوائنٹ بھی
ان کے کھاتے میں شامل کر دیا گیا ہے۔آئی سی سی کی جانب سے جاری بیان کے مطابق کوہلی آئی سی سی کے خابطہ اخلاق کے آرٹیکل 2.12

کی کلاف ورزی کے مرتکب قرار پائے جس پر ان کی سرزنش کرتے ہوئے ایک ڈی میرٹ پوائنٹ بھی دے دیا گیا ہے۔ستمبر 2017 سے ڈی میرٹ پوائنٹ کا قانون متعارف کرائے جانے کے بعد سے لے کر اب تک کوہلی کے منفی پوائنٹس کی تعداد 3 ہو گئی ہے۔یاد رہے کہ اتوار کو جنوبی افریقہ اور بھارت کے درمیان کھیلے گئے سیریز کے تیسرے ٹی20 میچ کے پانچویں اوور کے دوران کوہلی رن لیتے ہوئے جان بوجھ کر جنوبی افریقی باؤلر ہینڈرکس کے کندھے سے ٹکرائے تھے اور آن فیلڈ امپائرز نے انہیں ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کا مرتکب قرار دیا تھا۔کوہلی نے میچ ریفری رچی رچرڈسن کی جانب سے دی گئی اس سزا کو تسلیم کر لیا جس کے بعد باقاعدہ سماعت کی ضرورت محسوس نہیں کی گئی۔یاد رہے کہ اتوار کو کھیلے گئے میچ میں جنوبی افریقہ نے بھارت کو یکطرفہ مقابلے کے بعد 9 وکٹوں سے شکست دے کر سیریز 1-1 سے برابر کردی۔



[ad_2]

اورنج لائن میٹرو ریل سسٹم قومی خزانے پر بوجھ بن گیا منصوبے کے کچھ اجرا میں کمی کے باوجود لاگت کتنی بڑھ گئی ،جانئے

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)صوبائی دارالحکومت لاہور میں اورنج لائن میٹرو ریل سسٹم کی تعمیر میں تاخیر سے منصوبے کی پریمیم لاگت 50 فیصد تک بڑھ گئی ۔روزنامہ جنگ کے مطابق پنجاب ماس ٹرانزٹ اتھارٹی کے افسران نے انکشاف کیا ہے کہ اس میگا پراجیکٹ پر ترقیاتی کام کی معطلی سے قومی خزانے کو 11 ارب روپے کا بوجھ اٹھانا پڑا ہے۔
منصوبے کی تخمینہ لگائی گئی پریمیم لاگت 22 ارب روپے ہے لیکن یہ بڑھ کر 30 ارب روپے ہوگئی ہے۔ اس منصوبے کیلئے فٹ پاتھوں کی تعمیر کیلئے اضافی 3 ارب روپے مختص کرنے سے مجموعی پریمیم لاگت 33 ارب

روپے ہوگئی ہے۔ اورنج لائن میٹرو ریل سسٹم کے دو اجزا ہیں۔ ایک سی پیک اور دوسرا لوکل۔ پہلا جز سی پیک منصوبے کا حصہ ہے جبکہ دوسرے حصے کو پنجاب حکومت فنڈ کرتی ہے۔ پہلے جز کی تخمینہ لگائی گئی لاگت 1 ارب، 45 کروڑ، 81 لاکھ، 41 ہزار اور 720 روپے ہے۔ سی پیک جز کیلئے مکمل فنڈنگ چینی حکومت کی جانب سے کی جارہی ہے تاہم لوکل جز کی تخمینہ لگائی گئی پریمیم لاگت 22 ارب روپے سے بڑھ کر 33 ارب روپے ہوگئی ہے۔ منصوبے کے اخراجات میں کمی کرنے کیلئے موجودہ پنجاب حکومت نے اس منصوبے کے کچھ اجزا میں کمی کردی ہے لیکن پھر بھی لاگت 50 فیصد تک بڑھ گئی ہے۔ پی ایم ٹی اے کے افسران کا دعویٰ ہے کہ لوکل جز کی قیمت میں اضافہ تاخیروں کی وجہ سے نہیں جیسا کہ سول ورکس اور ای اینڈ ایم وقت پر مکمل ہوا۔یاد رہے کہ اس منصوبے کا افتتاح اس وقت کے وزیر اعلیٰ شہبازشریف نے کیا تھا۔



[ad_2]

چیئرمین سینٹ صادق سنجرانی جیت گئے لیکن جمہوریت‘ سیاست اور اخلاقیات تینوں ہار گئے،5 سینیٹرز نے جان بوجھ کر کیاکام کیا؟آج کے بعد ریاست مدینہ بنانے کا دعویٰ کھلم کھلا منافقت ہو گی، اپوزیشن مغالطے میں کیوں تھی اور اتنی خوفناک شکست کے بعد اب اپوزیشن کے پاس کیا آپشن بچا ہے؟ جاوید چودھری کا تجزیہ

پاکستان کی تاریخ میں بے شمار حیران کن دن گزرے ہیں‘ ان حیران کن دنوں میں آج ایک اور دن کا اضافہ ہو گیا‘ آج چیئرمین سینٹ صادق سنجرانی جیت گئے لیکن جمہوریت‘ سیاست اور اخلاقیات تینوں ہار گئے‘ آپ کمال دیکھیے‘
حکومت 36 ووٹوں کے ساتھ صادق سنجرانی کے پیچھے کھڑی تھی‘ اپوزیشن کے پاس 64 ووٹ تھے‘ کل بلاول بھٹو نے ظہرانہ دیا‘ اپوزیشن کے 64 سینیٹرز شریک ہوئے‘ کل حاصل بزنجو نے ڈنر دیا‘ 64 سینیٹرز شریک ہوئے‘ آج صبح مولانا فضل الرحمن کے ناشتے اور شہباز شریف کے لنچ میں بھی 64 سینیٹرز نے شرکت کی‘ ووٹنگ

سے قبل ہاتھ کھڑے ہونے کی باری آئی تو اس وقت بھی 64 سینیٹرز پورے تھے لیکن ایک منٹ بعد خفیہ رائے شماری ہوئی تو اپوزیشن 14 سینیٹرز سے محروم ہو چکی تھی‘ پانچ سینیٹرز نے جان بوجھ کر اپنے ووٹ خراب کر دیے جبکہ 9 سینیٹرز نے اپنی وفاداری بدل لی اور یہ ملک کے بلند اور مقدس ترین ایوان کی اخلاقی حالت ہے‘ یہ اس ملک کی اپوزیشن اور حکومت کا اخلاقی معیار ہے جسے ہم ریاست مدینہ بنانا چاہتے ہیں‘ اس اخلاقی حالت کے بعد ہمیں کم از کم اپنی حقیر زبانوں سے ریاست مدینہ کا نام نہیں لینا چاہیے کیوں کہ آج کے بعد یہ دعویٰ کھلم کھلا منافقت ہو گی‘ حکومتی ارکان کا اعتماد اپوزیشن کو سب کچھ بتا رہا تھا لیکن اپوزیشن مغالطے میں کیوں تھی؟ اور اتنی خوفناک شکست کے بعد اب اپوزیشن کے پاس کیا آپشن بچا ہے؟



[ad_2]

سانحہ کے ذمہ داروں کو معاف نہیں کروں گا،میرے ضمیر پر بوجھ ہوا تو اپنا استعفیٰ بلاول کے ہاتھ میں تھماؤں گا، شیخ رشید کا اعلان

اسلام آباد(آن لائن)وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ ٹرین حادثے کی رپورٹ 3سے چار روز تک جاری کردی جائے گی ذمہ داروں کو معاف نہیں کریں گے ٗمیرے ضمیر پر بوجھ ہوا تو اپنا استعفیٰ بلاول بھٹو کے ہاتھ میں تھماؤں گا۔ملک میں اس وقت 136مسافر ٹرینیں،55 مال گاڑیاں چل رہی ہیں۔مسافروں کی تعداد بڑھا کر 10ارب روپے سے زیادہ آمدن
اور 4ارب روپے خسارہ کم کیا ہے جبکہ مسافروں کی تعداد ایک کروڑ تک بڑھانے کا ہدف ہے،ایم ایل ون منصوبے سے تمام 2800پھاٹک اور 13ہزار پل بھی ختم کردیئے جائیں گے۔تفصیلات کی مطابق جمعرات کے

روز نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے شیخ رشید نے کہا ہے کہ ٹرین حادثے کی تحقیقات کررہے ہیں ذمہ داروں کو معاف نہیں کیا جائے گا جبکہ آئندہ تین سے چار روز میں حادثے کی رپورٹ بھی جاری کر دی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ اگرمیرے ضمیر پر ٹرین حادثات کا بوجھ ہوا تو استعفی بلاول بھٹو کے ہاتھ میں تھما دوں گا۔شیخ رشید احمد نے کہا کہ لوگوں کے پیٹ میں درد ہے کہ ہم 136ٹرینیں کیوں چلا رہے ہیں اس وقت ملک میں 136مسافر ٹرینیں جبکہ55مال گاڑیاں چل رہی ہیں، ہم نے ریلوے کی آمدن میں اضافہ کیا ہے، مسافروں کی تعداد بڑھنے سے ریلوے کو 10ارب روپے کی اضافی آمدن جبکہ4ارب روپے خسارہ بھی کم ہو چکا ہے، انہوں نے کہا کہ ہمارا ہدف مسافروں کی تعداد ایک کروڑ تک پہنچانا ہے، شیخ رشید نے کہا کہ ایم ایل ون منصوبے کے نتیجے میں ملک بھر میں 13ہزار ریلوے پل اور2800پھاٹک ختم ہو جائیں گے گل 2800ریلوے پھاٹکوں میں سے1500پر کوئی ملازم موجود نہیں ہوتا جو حادثات کا باعث بنتے ہیں۔



[ad_2]

عمران خان ایم پی ایز کو خرید رہے ہیں، رانا ثناء ا للہ کے خلاف جان بوجھ کر کیس بنایا گیاہے، جاوید ہاشمی نے سنگین الزامات عائد کردیئے

ملتان (آن لائن)سابق مسلم لیگ (ن)کے رہنما جاوید ہاشمی نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان ایم پی ایز کو خرید رہے ہیں اور سیاسی جماعتوں کی خریداری کا عمل عروج پر ہے یہ حکومت خود بھی مرے گی اورعوام کو بھی مارے گی، لگ رہا ہے کہ رانا ثناء ا للہ کے خلاف کیس بنایا گیا ہے۔ان خیالات کا اظہار جاوید ہاشمی نے منگل کے روز ملتان میں ایک تقریب کے دوران صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے کیاانہوں نے کہا کہ مجحے ایسے لگتا ہے کہ رانا ثناء للہ کے خلاف کیس بنایا گیا ہے کیونکہ زندگی

میں پہلی بار ایسے دیکھا ہے کہ بندہ شام کو
پکڑا ہے اور اگلے دن جوڈیشل بھی ہو گیا  جاوید ہاشمی نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ حکومت نے مہنگائی کر کے عوام کا جینا مشکل کر دیا ہے روزانہ ایک نئے طتریقے سے منگائی کی شرح میں اضافہ کر دیا جاتا ہے لیکن اب عوام مزید حکومتی ظلم برداشت نہیں کرے گی اور سڑکوں پر آئے گی  اب یہ حکومت کود بھی مرے گی اور عوام کو بھی مارے گی جاوید ہاشمی نے مزید کہا کہ اس وقت سیاسی جماعتوں کی خریداری کا عمل عروج پر ہے اور  وزیر اعظم عمران خان ایم پی ایز کو خرید رہے ہیں جس کے بارے ہر کسی کو پتہ ہے



[ad_2]

پاکستان کو نقصان پہنچانے کیلئے بھارت واقعی جان بوجھ کر انگلینڈ سے ہارا، گنگولی اور ناصر حسین بھی بول پڑے، بڑا تنازعہ کھڑا ہو گیا

برمنگھم (نیوز ڈیسک) پاکستان کو نقصان پہنچانے کے لیے بھارت واقعی جان بوجھ کر ہارا، بھارت کے سابق کپتان سارو گنگولی اور انگلینڈ کے سابق کھلاڑی ناصر حسین نے دوران کمنٹری دھونی اور یادیو کی سست بیٹنگ پر سوالات اٹھا دیے۔ دونوں کھلاڑی آخری اوورز میں ان کی غیر متوقع سست بیٹنگ دیکھ کر حیران رہ گئے۔ سارو گنگولی اور ناصر حسین نے کہا کہ دونوں کھلاڑیوں نے آخری اوورز میں جس طرح بیٹنگ کی ان کے پاس اس کا کوئی جواب
نہیں ہے، جو کچھ ہوا وہ سب دیکھ کر وہ حیران ہیں۔ اس کے علاوہ پاکستان کے سابق مایہ

ناز کھلاڑی وقار یونس نے اپنے ٹوئٹر پیغام پر اس معاملے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ”یہ آپ نہیں ہیں، جو آپ زندگی میں کرتے ہیں وہ آپ کو ظاہر کرتا ہے کہ آپ کیا ہیں، پاکستان سیمی فائنل میں جاتا ہے یا نہیں میں اس سے پریشان نہیں لیکن ایک چیز یقینی ہے کہ کچھ چیمپئنز کی سپورٹس مین شپ کا امتحان ہوا اور وہ اس میں بری طرح ناکام رہے۔“



[ad_2]

ورلڈ کپ میں میچ فکسنگ کی گونج!بھارت جان بوجھ کر انگلینڈ سے ہارا۔۔معاملہ آئی سی سی تک پہنچ گیا

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)گزشتہ روز میچ میں بھارت کو انگلینڈ سے 31رنز سے ہار ناگلے پڑ گیا ۔ تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی پر ایک صحافی نے میچ کو ’’فکسنگ ‘‘ قرار دیتے ہوئے آئی سی سی سے سخت ایکشن لینے کا مطالبہ کر دیا ہے ۔ تفصیلات کے مطابق لندن میں نجی ٹی وی پر صحافی مرتضی علی شاہ نے کہا ہے کہ یہ میچ فکس تھا، بھارت اور انگلینڈ کے مابین ہونیوالے مقابلے میں بھارت کی شکست مشکوک دکھائی دیتی ہے ،
آئی سی سی کو چاہیے وہ اس میچ کی تحقیقات کروائیں اور ذمہ داروں کیخلاف سخت کاروائی کریں ،

کیونکہ یہاں سپاٹ فکسنگ نہیں بلکہ پورے کا پورا میچ ہی فکس ہوا ہے، اگر آئی سی سی بھارت کی اس خراب کارگردگی پر کوئی ایکشن نہیں لیتا تو وہ اخلاقی اتھارٹی کھو دے گا ۔ دوسری جانب پاکستان کاسیمی فائنل کھیلنے کیلئے بنگلہ دیش سے اچھے مارجن سے میچ جیتنا ہی کافی نہیں بلکہ انگلینڈ کا نیوزی لینڈ سے ہارنا بھی ضروری ہو گیا ہے۔



[ad_2]

محمد شہزاد کو جان بوجھ کر ورلڈکپ سے ڈراپ کرنے کی خبریں، افغان کرکٹ بورڈکاموقف بھی سامنے آگیا،اصل وجہ بتادی

لندن(این این آئی)محمد شہزاد کو ورلڈ کپ اسکواڈ سے ڈراپ کرنے کے حوالے سے افغانستان کرکٹ بورڈ نے و ضاحت کرتے ہوئے کہاہے کہ محمد شہزاد کو جان بوجھ کر ورلڈکپ سے ڈراپ کرنے کی خبر میں کوئی صداقت نہیں۔افغانستان کرکٹ بورڈ کے چیف ایگزیکٹو عبداللہ خان کے مطابق اس بات میں کوئی صداقت نہیں کہ شہزاد کو جان بوجھ کر ورلڈ کپ اسکواڈ سے ڈراپ کیا گیا،
ہم نے آئی سی سی کو شہزاد کی ان فٹ ہونے کی میڈیکل رپورٹ دی ہے جس کے بعد ہمیں شہزاد کے متبادل کھلاڑی کو ٹیم میں شامل کرنے کی اجازت ملی۔ عبداللہ

خان نے کہاکہ ہم بخوبی جانتے ہیں کہ ورلڈ کپ کے ابتدائی دو میچوں کے دوان شہزاد مکمل طور پر فٹ نہیں تھا اور ان کے فٹنس مسائل کو مزید برداشت نہیں کیا جا سکتا تھا۔ورلڈ کپ اسکواڈ سے ڈراپ کیے جانے پر انگلینڈ سے کابل پہنچنے پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے محمد شہزاد نے کہا کہ اگر میرا بورڈ مجھے کھلانا نہیں چاہتا تو بتادیں، میں کرکٹ چھوڑنے کے لیے تیار ہوں۔ انہوں نے کہاکہ میں لندن میں ڈاکٹر کے پاس گیا تھا اور انہوں نے میرے گھٹنے سے پانی نکالنے کے بعد دوائی دیتے ہوئے کہا تھا کہ میں 2 سے 3 دن آرام کے بعد کھیل سکتا ہوں۔محمد شہزاد نے انکشاف کیا کہ میں نے ٹیم کے پریکٹس سیشن میں حصہ لیا، کیپنگ سیشن میں شرکت کی اور پھر ٹیم کے کھلاڑیوں کے ہمراہ لنچ کرنے کے بعد بس میں ہوٹل کے لیے روانہ ہوا تو میرے موبائل پر آئی سی سی کی پریس ریلیز موصول ہوئی کہ میں ورلڈ کپ سے باہر ہو گیا ہوں اور اس وقت مجھے پتہ چلا کہ میں ان فٹ ہوں، 2015 ورلڈ کپ میں بھی فٹنس مسائل کو جواز بنا کر مجھے باہر بٹھا دیا گیا، ایک بار پھر ایسا ہی کیا گیا ہے۔واضح رہے کہ محمد شہزاد کو افغانستان کی طرف سے سب سے زیادہ2727 رنز بنانے کا اعزاز حاصل ہے۔



[ad_2]

ماضی کا بوجھ وبال بن گیا،رواں مالی سال حکومت کو بیرونی قرضوں کی ادائیگی کیلئے کتنے ارب ڈالرز چاہئیں؟ انتہائی تشویشناک انکشافات

کراچی(این این آئی) پاکستان نے مالی سال2019-20میں آئی ایم ایف پروگرام کے تحت 12 ارب ڈالر کے غیرملکی قرضے لینے کا ارادہ کرلیا لیکن اس کیلیے پہلے 10.7ارب ڈالرکے قرضوں کی ادائیگی اور زرمبادلہ کے ذخائر مستحکم کرناہوں گے۔حکام کے مطابق وفاقی وزارت خزانہ نے تخمینہ لگایاہے کہ یوروبانڈ کے اجرا اور عالمی اداروں سے قرض کی مد میں 12.3ارب ڈالر مل سکتے ہیں جبکہ ملکی ضروریات کیلیے19ارب ڈالر چاہیے ہوں گے جس میں زرمبادلہ کے ذخائر کے استحکام کیلیے اضافی رقوم اور 3ماہ کی درآمدات کیلیے مالی ضروریات شامل
نہیں ہیں۔ حکومت کوبیرونی قرضوں کی ادائیگی کیلیے10.7ارب ڈالر اورکرنٹ اکانٹ

خسارے کو پورا کرنے کیلیے 8.3ارب ڈالر درکارہوں گے۔ذرائع کے مطابق 2.5ارب ڈالر کی بیرونی سرمایہ کاری اور اداروں کی نجکاری سے2ارب ڈالر حاصل ہوں گے۔ حکومت کیلیے اصل چیلنج زرمبادلہ کے ذخائر کو13ارب ڈالر کی سطح پر لاناہے جو رواں ماہ کے آخر تک صرف7ارب ڈالر ہوں گے جبکہ اس وقت زرمبادلہ کے ذخائر8ارب ڈالر ہیں۔ اسٹیٹ بینک کو مالی سال 2019-20میں زرمبادلہ کے ذخائر کو مستحکم رکھنے کیلیے6سے 7ارب ڈالر درکار ہیں۔



[ad_2]