Tag Archives: دیا

مصباح الحق کو تمام فارمیٹس میں کوچنگ کی ذمہ داری دے کر بوجھ لاد دیا گیا، رمیز راجہ

کراچی(این این آئی) سابق پاکستانی کپتان رمیز راجہ نے کہا ہے کہ مصباح الحق کو تمام فارمیٹس میں کوچنگ کی ذمہ داری دے کر بوجھ لاد دیا گیا ہے۔ ایک انٹرویو میں رمیز راجہ نے کہاکہ مصباح الحق کو تمام فارمیٹس میں کوچنگ کی ذمہ داری دے کر بوجھ لاد دیا گیا ہے، میں سمجھتا ہوں کہ ٹوئنٹی 20 کھلاڑیوں کی سمت درست کرنے کیلگے ہارڈ ہٹر کوچ کی ضرورت ہے، انھوں نے کہا کہ پرانے
کھلاڑیوں کو واپس لایا گیا جو دباؤ میں پرفارم نہیں کرپائے، بابر اعظم سے اوپننگ کرانا درست نہیں تھا۔سرفراز احمد اچھی فارم میں نہیں، ان

کی جگہ حارث سہیل کو چوتھے نمبر پر بھیجنا چاہیے تھا، رمیز نے کہا کہ مختصر ترین فارمیٹ میں نوجوان کھلاڑیوں کو سامنے لانے کی ضرورت ہے، ہم نے دوسرے ٹی 20 میں صرف 2 چھکے جڑے جبکہ حریف سائیڈ کی اننگز میں 8 سکسرز شامل تھے۔



[ad_2]

عمران خان کے بھتیجے نے پاکستان تحریک انصاف کے وزیر کو بے نقاب کر دیا فیاض الحسن چوہان پر سنگین الزامات عائد ، تہلکہ خیز انکشافات کر دیئے

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک)وزیراعظم عمران خان کے بھتیجے نے ایک ویڈیو پیغام جاری کیا جس میں انہوں نے کہا ہے کہجب جہاں ظلم ، نا انصافی حد سے بڑ جائے اس کیخلاف آواز اٹھانا ضرور ی ہوجاتا ہے ۔ تفصیلات کے مطابق عمران خان کے بھتیجے تحریک انصاف کے صوبائی وزیر فیاض الحسن چوہان سے متعلق بات کرتے ہوئے کہا کہ میرے ان کیساتھ بڑے اچھے تعلقات ہیں
وہ میرے بھائیوں کی طرح ہیں ، انہوں نے میری کئی جگہوں پر مدد کی ہے ۔ لیکن آج مجھے یہ بیحد افسوس کیساتھ کہنا پڑا رہا ہے کہ انہوں نے پنڈی کے بدمعاش ، اسمگلرز ، جواریوں

، ٹھگ اور بھنگیوں کو پالا رکھا ہے ۔ کچھ دن قبل میں ان کے ہاتھوں بال بال بچا ہوں ۔ سات افراد پنڈی ہستپال میں زیر علاج ہیں ۔ وزیراعظم کے بھتیجے نے کہا ہے کہ جو کوئی بھی عدالتوں میں ان کیخلاف کوئی بیان دے یا ان کیخلاف کیس کرے تو یہ آکر اسے مار مار کر قیمہ بنا دیتے ہیں۔صوبائی وزیر نے جو لڑکے رکھے ہوئے ہیں یہ سب ضیاالحق کی پیدوار ہیں ۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ان غنڈوں کے پیچھے فیاض الحسن چوہان کے علاوہ کسی بھی وزیر کے ملوث ہونے کا انکشاف ہوا تو ان کو بھی منہ توڑ جواب دیا جائے گا۔ ہمیں نہ گولی کا ڈر ہے ، نہ موت کا اور نہ کبھی حرام کھایا ہے اور نہ کھائیں گے ۔ ان کی پراڈوز میں نہیں بیٹھتا ، نہ ان کے پیسوں کے کپڑے پہنچتا ہوں ۔ وزیراعظم کے بھتیجے نے تحریک انصاف کے لوگوں سے درخواست کی آپ ایسے کسی بھی لیڈرز کو دیکھیں جو عمران خان کے وژن کو نقصان پہنچا رہے ہیں تو ان کیخلاف بھرپور آواز اٹھائیں ، چاہے وہ آپ کا دوست ہو یا پھر کوئی قریبی ہی کیوں نہ ہوآپ اس کیخلاف آواز اٹھائیں ۔



[ad_2]

بھارتی اور اسرائیلی پائلٹس کو اس بات کا علم ہی نہیں کہ ۔۔۔!!! پاک فضائیہ کے سابق چیف سہیل امان نے 27 فروری کو پیش آنیوالے واقعہ سے متعلق بڑاانکشاف کر دیا ، پوری دنیا پاکستانی پائلٹوں کی مہارت پر دنگ رہ گئی

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستان ائیرفورس کے سابق چیف سہیل امان نےبھارتی فضائیہ کی پیشہ ورانہ منصوبہ بندی اور پائلٹس کو ملنی والی تربیت پر بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارتی جنگی ہوا بازوں کی پیشہ وارانہ صلاحیتوں کا اندازہ ا س بات سے بخوبی لگایا جا سکتا ہے کہ ان کے ایک
روسی ایس یو 30 جنگی طیارے کو ان کے اپنے زیر کنٹرول علاقے میں 25 میل اندر پاکستانی پائلٹ نے لائن آف کنٹرول عبور کیے بغیر مار گرایا۔ ان کا کہنا تھا کہ جنگ کسی بھی مسئلے کا حل نہیں لیکن ہم ہمہ وقت دشمن کی کسی بھی جارحیت

کا منہ توڑ جواب دینے کیلئے تیار ہیں۔سابق یئر چیف سہیل امان نے مزید کہا کہ بھارتی افواج کی آپس کی کوآرڈی نیشن حال یہ ہے کہ 27 فروری کو پاکستان کی طرف سے جوابی وار نے انہیں بوکھلاہٹ کا شکار کر دیا تھا کہ اس دوران بھارت نے اپنا ہی ایم آئی 17 ہیلی کاپٹر مار گرایاتھا۔ ایک سوال دہرایا جاتا ہے کہ اسرائیلی پائلٹ بھی اس آپریشن میں شامل تھا کیا کوئی اسرائیلی پائلٹ گرفتار ہوا یا نہیں ؟ سابق ائیر چیف نے اس بات پر براہ راست جواب دینے سے گریز کرتے ہوئے کہا کہ اگر اسرائیلی پائلٹ بھارت کیساتھ شامل تھے تو اس کا مطلب یہ ہوا کہ ان کی تیاری اور آپریشن کی پلاننگ کا کوئی حال نہیں ۔



[ad_2]

عمران خان کے مشیر برائے احتساب شہزاد اکبر آج کل کہاں ہیں ؟ سینئر صحافی نے حیرت انگیز دعویٰ کر دیا

اسلام آباد (مانیٹرمگ ڈیسک )پی ٹی آئی حکومت کے بیرسٹر شہزاد اکبر گزشتہ چند ماہ سے میڈیا سے لاپتہ ہیں۔اس حوالہ سے روزنامہ جنگ میں سینئر صحافی انصار عباسی لکھتے ہیں کہ شہزاد اکبر نے گزشتہ کئی ہفتوں سے کوئی پریس کانفرنس نہیں کی۔
ٹاک شوز میں بھی بمشکل ہی نظر آتے ہیں۔ بیرون ممالک کے بینکوں میں پاکستانیوں کی جانب سے جمع کیے گئے 200 ارب ڈالرز کی واپسی کیلئے وزیراعظم سیکریٹریٹ میں قائم کیے گئے اثاثہ ریکوری یونٹ (اے آر یو) کے سربراہ شہزاد اکبر فون بھی نہیں اٹھا رہے۔ پیغامات کا جواب بھی نہیں دے رہے۔وزیراعظم سیکریٹریٹ میں ان کے

اسٹاف سے جب رابطہ کیا گیا تو انہوں نے بتایا کہ بیرسٹر صاحب باہر گئے ہیں اور میٹنگوں میں مصروف ہیں۔ ان کی غیر موجودگی میں چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی نے ایک سے زیادہ مرتبہ کہا ہے کہ بیرون ملکوں کے بینکوں میں غیر قانونی طور پر جمع کیے گئے پاکستانیوں کے 190 ارب ڈالرز کی رقم پاکستان واپس لانا مشکل ہے۔بیرسٹر شہزاد اکبرکی طرف سے کوئی وضاحت سامنے نہیں آ رہی جس سے یہ معلوم ہو سکے آخر ایسی صورت میں اے آر یو کے باقی رہنے کا جواز کیا ہے کیونکہ حکومت خود اعتراف کر چکی ہے کہ وہ بیرون ملک سے پاکستانیوں کے اربوں ڈالرز واپس نہیں لا سکتی۔یاد رہے کہ بیرسٹر شہزاد اکبر وزیر اعظم کے مشیر برائے احتساب ہیں۔



[ad_2]

ہم عمران خان پر لاکھوں اعتراض کر لیں لیکن آج ٹویٹر نے۔۔انہیں دنیا کا چھٹا مقبول ترین لیڈر قرار دے دیا‘ یہ عمران خان کی عالمی مقبولیت کی دلیل ہے‘ یہ بس ایک جگہ پر مار کھا رہے ہیں اور وہ جگہ کیا ہے؟مولانا فضل الرحمان اور حکومت کے درمیان ”میچ“ کون جیتے گا؟جاوید چودھری کا تجزیہ

ہم عمران خان پر لاکھوں اعتراض کر لیں لیکن آج ٹویٹر نے۔۔انہیں دنیا کا چھٹا مقبول ترین لیڈر قرار دے دیا‘ عمران خان کے ٹویٹر فالورز میں۔۔اس سال دس لاکھ لوگوں کا اضافہ ہوا‘۔۔ان کے فالورز اب ایک کروڑ پانچ لاکھ ہیں‘ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ پہلے نمبر پر ہیں‘ نریندر مودی دوسرے‘ پوپ فرانسنس تیسرے‘ طیب اردگان چوتھے‘ انڈونیشیا کے صدر جوکو پانچویں اور عمران خان چھٹے نمبر پر آ چکے ہیں‘ یہ عمران خان کی عالمی مقبولیت کی دلیل ہے‘ یہ بلاشبہ مقبول ہیں‘
مقناطیسی شخصیت کے مالک ہیں‘ جرات کے ساتھ بات بھی کرتے ہیں اور کیمرے اور

سکرین کو بھی اپنی طرف متوجہ کر لیتے ہیں‘ یہ بس ایک جگہ پر مار کھا رہے ہیں اور وہ جگہ ہے پرفارمنس‘ یہ اگرملک کے اندر پرفارم کر جائیں‘ یہ جو کہہ رہے ہیں یہ (اس) پر عمل کر جائیں تو یہ چھٹے سے پہلے نمبر پر بھی آ جائیں گے اور پاکستانی۔۔ان کی تصویر قائداعظم کے ساتھ بھی لگادیں گے۔۔لیکن اگر یہ پرفارم نہیں کرتے تو پھر۔۔ان کی یہ مقبولیت۔۔ان کے کسی کام نہیں آ سکے گی۔ ہم آج کے موضوع کی طرف آتے ہیں ”وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمودخان نے واضح کیاہے کہ بشام جلسے میں کہی اپنی بات پر آج بھی قائم ہوں،جے یوآئی کو جلوس نہیں گزارنے دینگے۔وزیراعلیٰ نے ایک مرتبہ پھر ہڑتال کرنیوالے ڈاکٹرزکودعوت دیتے ہوئے کہاہے کہ حکومت انکے ساتھ بیٹھنے کیلئے تیار ہے لیکن وہ اپنی ہڑتال ختم کرے تاہم اس عمل کو حکومت کی کمزوری نہیں سمجھاجائے اورنہ ہی کوئی کمزوری دکھائے گی۔“جبکہ ”متحدہ اپوزیشن کی رہبر کمیٹی نے وزیراعظم عمران خان سے استعفیٰ اور ملک میں فوری نئے انتخابات کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ انتخابات میں فوج کا عمل دخل نہیں ہونا چاہئے، سی پیک اتھارٹی کے حوالے سے آرڈیننس کو مسترد کرتے ہیں، اپوزیشن متحد ہے اور مستقبل میں بھی متحد رہے گی،حکومت تمام قیمتی اثاثوں کو بیچنا شروع ہوچکی ہے،
خطرہ ہے کہیں یہ ملک ہی نہ بیچ دے“
حکومت اور اپوزیشن دونوں ڈٹ گئے ہیں‘ مولانا کا کہنا ہے یہ اسلام آباد ضرور آئیں گے جب کہ حکومت بار بار کہہ رہی ہے مولانا نہیں آ سکیں گے‘ یہ میچ کون جیتے گا‘ کون ہارے گا‘ یہ ہمارا آج کا ایشو ہوگا جب کہ وزیراعظم نے آج چین میں فرمایا‘ میں 500 لوگوں کو جیل میں ڈالنا چاہتا ہوں‘ ہم یہ بھی ڈسکس کریں گے‘ ہمارے ساتھ رہیے گا۔



[ad_2]

’’اگلے مورچوں پر جارہا ہوں زندہ رہا تو بات ہو گی ورنہ اللہ حافظ‘‘ پاک فوج کے جوان تیمور اسلم کی شہادت سے ایک گھنٹہ قبل اپنی اہلیہ سے کی جانے والی گفتگو نے سب کورلا دیا‎

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)معروف کالم نگار اسلم لودھی اپنے کالم ’’لانس نائیک تیمور اسلم شہید‘‘ میں لکھتے ہیں کہ۔۔۔۔جمعہ کا دن تھا ‘نماز عشا کے بعد مساجد میں اعلان ہوا کہ کنٹرول لائن پر وطن عزیز کا دفاع کرتے ہوئے پاک فوج کے جوان‘ لانس نائیک تیمور اسلم جو شہید ہوگئے تھے ان کی نماز جنازہ والٹن روڈ لاہور کینٹ سے ملحقہ گرائونڈ میں 10 بجے رات پڑھائی جائے گی ۔
پاک فوج اور اس کے شہیدوں سے مجھے والہانہ محبت ہے ‘ یہی محبت مجھے ان شہیدوں کے گھروں تک لے جاتی ہے جہاں لواحقین بھی اپنے پیارے کی جدائی میں آنسو

بہاتے ہیںاور میں بھی ان کا ساتھ دیتا ہوں ۔یوں ایک ایسی داستان تحریر پاتی ہے جسے قارئین پسند فرماتے ہیں۔جیسے ہی میں متعلقہ گرائونڈ میں پہنچا تو ایک جم غفیر پہلے سے وہاں موجود تھا ۔ دور دور تک لوگ پھولوں کے ہار لیے شہید کے جسد خاکی کی آمد کے منتظر تھے ‘ تقریبا رات 12 بجے شہید کے جسد خاکی کو پورے فوجی اعزاز کیساتھ اس گرائونڈ میں لایا گیا جہاں ان کی نماز جنازہ ادا کی جانی تھی ۔ نماز جنازہ پیر سید سعید الحسن شاہ (صوبائی وزیر مذہبی امور) نے نماز جنازہ پڑھائی پھر والٹن اسٹیشن کے قریب ریلوے آفیسر کالونی کے قبرستان میں شہید کو فوجی اعزاز کیساتھ رات کے پچھلے پہر دفن کردیا گیا۔تیمور اسلم شہید ‘ پیر کالونی گلی نمبر 7 والٹن روڈ لاہورکینٹ میں 1991ء میں پیدا ہوئے ‘ جہاں انکے والدین قیام پذیر تھے ‘یہ خاندان 1989ء میں ناروال سے لاہورشفٹ ہوا تھا۔تیمور اپنے والدین کا سب سے بڑا بیٹا تھا جبکہ اسی گھر میں 3 بہنیں اورایک بھائی ( محمد مبین ) بھی ہے ۔ تیمور کی پیدائش ‘ پرورش اور تعلیمی مدارج لاہور میں ہی طے ہوئے ۔تیمور کی تربیت میں والدین کیساتھ ساتھ نانا نانی اور ماموں کابھی کردار بہت اہم تھا۔ تیمور نے میٹرک کاامتحان کینٹ ایریا کی مقبول ترین تعلیمی درسگاہ “قربان اینڈ سرویا ایجوکیشنل ٹرسٹ” والٹن روڈ سے پاس کیا ۔ بعد ازاں تعلیم کو خیر باد کہہ کرفوج میں بھرتی ہوگئے ۔
وہ فوج سے اس قدر والہانہ محبت کرتے تھے کہ اگر انہیں کوئی باوردی فوجی نظر آتاتو اسے سیلوٹ ضرور کرتے ۔ 1965ء کی پاک بھارت جنگ کے ہیرو میجر عزیز بھٹی شہید (نشان حیدر) کا ڈرامہ انہیں بے حد پسند تھاجب میجر عزیزبھٹی کی شہادت کا منظر سامنے آتا تو ان کی آنکھوں سے بے ساختہ آنسو بہہ نکلتے اور کہتا کہ میں بھی اسی طرح وطن کی حفاظت کرتے ہوئے جام شہادت نوش کروں گا ۔
تیمور اسلم 2011 ء میں فوج میں بطور سپاہی بھرتی ہوکر 12بلوچ رجمنٹ (جو ان دونوں اوکاڑہ میں تعینات تھی) کا حصہ بنے۔ بعدازاں یہ رجمنٹ وزیرستان چلی گئی جہاں کتنی بار لانس نائیک تیمور اسلم کاسامنا دہشت گردوں سے ہوا ۔ ہر مقابلے میں تیمور اسلم نے دہشت گردوں کو جہنم واصل کیا ۔9 ستمبر 2017ء کو وہ رشتہ ازواج میں منسلک ہوئے ۔اللہ تعالی نے ایک بیٹی سے نوازا جو تیمور اسلم کی جان تھی ‘
تیمور جب بھی قبائلی علاقوں سے فون پر بات کرتا تواپنی بیٹی کی آواز سنانے کی فرمائش کرتا ‘چند ماہ پہلے تیمور اسلم کو وزیرستان سے کنٹرول لائن پر تعینات کردیاگیا جہاں وادی لیپا کی جبار پوسٹ پر انہیں بھیج دیاگیا ۔یہ مقام وہ ہے جہاں بھارتی فوج کیساتھ روزانہ جھڑپیں ہوتی رہتی ہیں ‘ بھارتی فوج اندھا دھند گولہ باری کرتی رہتی ہے جبکہ پاک فوج کے جوان اس کا منہ توڑ جواب دیتے ہیں ۔
اپنی شہادت سے ایک گھنٹہ پہلے تیمور اسلم نے اپنے گھر فون کیا والدہ اور اہلیہ سے بات کی ۔ اہلیہ سے مخاطب ہوکر کہا میں اگلے مورچوں میں جارہا ہوں ‘ اگر زندگی رہی تو بات ہوگی وگرنہ خدا حافظ ۔یہ کہتے ہوئے تیمور اسلم بیس کیمپ سے وادی لیپا کی جبار پوسٹ کی جانب روانہ ہوئے جہاں فائرنگ کا نہ ختم ہونیوالا سلسلہ جاری تھا جس کا موثر جواب پاک فوج کے جوان دے رہے تھے
اسی دوران دشمن کی جانب سے توپ خانے سے گولہ باری شروع ہوگئی اس گولہ باری سے پاک فوج کے تین جوان موقع پر ہی شہید ہوگئے ان میں ایک تیمور اسلم بھی تھے ۔ یہ سانحہ 15اگست 2019ء کو پیش آیا ۔ تدفین کے چندروز بعد تیمور اسلم شہید چند ایک لوگوں کے خواب میں نظر آئے ۔ محلے کا ایک شخص تعزیت کیلئے آیا اس نے بتایا کہ میںنے خواب میں تیمور شہید کو کچھ اس حالت میں دیکھا کہ
انہوں نے فوج کی وردی پہن رکھی ہے جس پر بے شمار تمغے سجاہوئے ہیںجبکہ ان کے سر پر ہیرے اور موتیوں سے بنا ہوا خوبصورت تاج تھا تیمور شہید بہت خوش دکھائی دے رہے تھے ۔بیوی نے بھی خواب میں اپنے شوہر کو دیکھاجو اپنی لاڈلی بیٹی (جو ابھی آٹھ ماہ کی ہے) کو گود میںلے کر پیار کررہے تھے۔حضرت عبداللہ بن مسعود ؓ کہتے ہیں میں نے عرض کیا یا رسول اللہ ﷺاللہ تعالی کو
کونسا عمل زیادہ محبوب ہے ؟” آپؐ نے ارشاد فرمایا وقت پر نماز پڑھنا ‘ والدین سے حسن سلوک کرنا ‘ اور اللہ کی راہ میں جہاد کرنا” ۔ یہ حقیقت ہے کہ شہادت کی موت ہر کسی کے نصیب میں نہیں ہوتی ۔ قرآن پاک میںہے کہ اللہ کی راہ میں جا ن قربان کرنے والے کو مردہ نہ کہو بلکہ وہ تو زندہ ہیں ۔ بہرکیف اس کالم کے حوالے سے میںکور کمانڈر لاہور سے گزارش کروںگا کہ جس طرح پاک فوج کے باقی شہداء کے ناموں پر کینٹ ایریا کی سڑکوں کے نام رکھے گئے ہیںاسی طرح تیمور اسلم شہید جو کہ والٹن روڈ لاہور کینٹ کا رہائشی تھا ان کے نام پر یا تو والٹن روڈ کا نام تیمور اسلم شہید روڈ رکھاجائے اگر ایساممکن نہیں تو ڈیفنس چوک کو شہید کے نام سے منسوب کردیا جائے۔بے شک زندہ قومیں اپنے ہیروزکو نہیں بھولتیں ۔



[ad_2]

عثمان بزدار کے دور اقتدار میں عوام کو چوروں، ڈاکوؤں کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا، رواں سال کے پہلے 8مہینوں میں کتنے کیسز رجسٹرڈ ہوئے؟جانئے

لاہور(آن لائن)پنجاب میں ڈکیتی، اغوا برائے تاوان، راہزنی، قتل اور اقدام قتل کے واقعات میں پچیس فیصد اضافہ ہو گیا ہے۔ رواں سال کے پہلے آٹھ میں مختلف نوعیت کے تین لاکھ23 ہزار 68کیسز رجسٹرڈ ہوئے جن کی تعداد گزشتہ سال سے 64922 زیادہ ہیں۔پولیس ریکارڈ کے مطابق2018 کے پہلے آٹھ ماہ کے دوران دولاکھ58 ہزار 145 کیسز رجسٹرڈ ہوئے تھے۔ رواں سال کے دوران ڈکیتی کے538 کیسز جبکہ گزشتہ سال479 کیسز رجسٹرڈ ہوئے تھے۔گزشتہ سال
راہزنی کے8561 واقعات جبکہ رواں سال10171 واقعات رجسٹرڈ۔ 2018 میں اغوا برائے تاوان کے35 جبکہ رواں سال 47 کیسز رپورٹ ہوئے۔پولیس ریکارڈ کے مطابق 2018

میں خواتین اور بچوں سے زیادتی کے2197 کیسز جبکہ رواں سال 2560 کیسز رجسٹرڈ ہوئے۔گزشتہ برس گاڑیاں چوری ہونے کے11638 واقعات جبکہ رواں سال14966 کیسز رجسٹرڈ ہوئے۔  گزشتہ سال  گاڑیاں چھیننے کے2297واقعات جبکہ رواں سال2524 کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔



[ad_2]

’’میرٹ گیا تیل لینے ، وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی من مانیاں ‘‘ بھائیوں کو نوازنے کا سلسلہ شروع ، بھائی بھی خود کو وزیراعلیٰ سمجھنے لگے جانتے ہیں ڈیرہ غازی خان میںکتنے منصوبے کا افتتاح کر دیا ؟

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)عثمان بزدار کے بھائی کووزیراعلیٰ پنجاب کا پروٹوکول ملنے لگا ۔عثمان بزدار نے اپنے بارہا تقریر میں یہ اعلان کیا تھا کہ میں میرٹ پر کام کروں گا اور کسی اپنے کو نہیں نوازوں گا ۔لیکن ان کے بھائی مختلف منصوبوں کا افتتاح کرتے پھر رہے ہیں ، تختی وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی ہوتی لیکن افتتاح کیلئے بھائی طاہر بزدار پہنچ جاتے ہیں ۔ فیتہ کاٹتے ہیں بلکہ وہاں لوگوں سے تالیاں بھی بجوائی جاتی ہیں ۔ یہاں عثمان بزدارکا
بھائی بھی خود کو وزیراعلیٰ سمجھتا ہے ۔ ڈی جی خان یا پھرتونسہ کے اندر کسی بھی

پروجیکٹ کا افتتاح ہو گا وزیراعلیٰ کے بھائی کو کھلی اجازت ہے وہ وہاں جا کر بغیر کسی سرکاری عہدے افتتاح کر سکتے ہیں۔ نجی ٹی وی نے مختلف پروجیکٹس کے افتتاح کی تصویر بھی جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ وفاقی حکومت کا کوئی وزیر ، مشیر بھی اس معاملے پر بات کرنے سے گریزاں ہے ،ہمارا آزاد میڈیا بھی معاملے کو ہائی لائٹ کرنے سے اجتناب برت رہا ہے‎



[ad_2]

ہمارااب اگلا ٹارگٹ لاہور ہے اور وہاں بھی۔۔۔!!! چیف جسٹس نے زبردست اعلان کر دیا

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک )چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا ہے کہ اللہ کی مہربانی سے آج پشاور کی کرمنل اپیلیں ختم ہو گئی ہیں اور اب اگلا ٹارگٹ لاہور ہو گا ۔نجی ٹی وی کے مطابق چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ نے وڈیو لنک کے ذریعے پشاور رجسٹری کی سماعت کے دوران ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ اللہ تعالیٰ کی مہربانی سے آج پشاور کی
کرمنل اپیلیں ختم ہوگئی ہیں، کراچی اور کوئٹہ رجسٹری کی اپیلیں پہلے ہی صفر ہوگئی تھیں، یہ سب اللہ تعالیٰ کی مہربانی اور تمام لوگوں کے تعاون سے ممکن ہواہے ۔ ان کا کہناتھا

کہ اگلا ٹارگٹ لاہور ہے، انشاءاللہ 7 سے 10 دن میں لاہورکی کرمنل اپیلیں بھی صفر ہوجائیں گی۔یاد رہے کہ چیف جسٹس کے حکم پر قائم ماڈل کورٹس کی کارکردگی بھی متاثر کن ہے ۔



[ad_2]

نہ اسلام آباد میں دھرنا ہوگا اور نہ ہی لاک ڈاؤن بلکہ اب ہم کیا کرینگے؟، جمعیت علمائے اسلام (ف)  نے بڑا سرپرائز دے دیا

راولپنڈی (این این آئی) نہ اسلام آباد میں دھرنا ہوگا اور نہ ہی لاک ڈاؤن بلکہ اب ہم کیا کرینگے؟، جمعیت علمائے اسلام (ف)  نے بڑا سرپرائز دے دیا، تفصیلات کے مطابق جمعیت علمائے اسلام (ف) کے رہنما اکرم درانی نے کہاہے کہ جے یو آئی کا اسلام آباد کے لاک ڈاؤن یا دھرنے کا کوئی پروگرام نہیں، لاک ڈاؤن اور دھرنے کے الفاظ جلتی پہ تیل کا کام کر رہے ہیں۔ میڈیا سے
بات چیت کرتے ہوئے اکرم درانی نے کہا کہ جمعیت علمائے اسلام کے احتجاج کا نام صرف آزادی مارچ ہے، یہ مارچ کتنا طویل ہونا چاہیے اس

کا فیصلہ وقت اور حالات کے مطابق کیا جائے گا، ہم اپنے پَتے وقت سے پہلے شو کرنا نہیں چاہتے۔جمعیت علمائے اسلام کے رہنما اکرم خان درانی نے کہا کہ 27 اکتوبر کا آزادی مارچ  کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لیے ہے



[ad_2]