Tag Archives: مصباح

مصباح الحق کو تمام فارمیٹس میں کوچنگ کی ذمہ داری دے کر بوجھ لاد دیا گیا، رمیز راجہ

کراچی(این این آئی) سابق پاکستانی کپتان رمیز راجہ نے کہا ہے کہ مصباح الحق کو تمام فارمیٹس میں کوچنگ کی ذمہ داری دے کر بوجھ لاد دیا گیا ہے۔ ایک انٹرویو میں رمیز راجہ نے کہاکہ مصباح الحق کو تمام فارمیٹس میں کوچنگ کی ذمہ داری دے کر بوجھ لاد دیا گیا ہے، میں سمجھتا ہوں کہ ٹوئنٹی 20 کھلاڑیوں کی سمت درست کرنے کیلگے ہارڈ ہٹر کوچ کی ضرورت ہے، انھوں نے کہا کہ پرانے
کھلاڑیوں کو واپس لایا گیا جو دباؤ میں پرفارم نہیں کرپائے، بابر اعظم سے اوپننگ کرانا درست نہیں تھا۔سرفراز احمد اچھی فارم میں نہیں، ان

کی جگہ حارث سہیل کو چوتھے نمبر پر بھیجنا چاہیے تھا، رمیز نے کہا کہ مختصر ترین فارمیٹ میں نوجوان کھلاڑیوں کو سامنے لانے کی ضرورت ہے، ہم نے دوسرے ٹی 20 میں صرف 2 چھکے جڑے جبکہ حریف سائیڈ کی اننگز میں 8 سکسرز شامل تھے۔



[ad_2]

سری لنکا کیخلاف قومی ٹیم کی ناقص کارکردگی پر مصباح الحق برس پڑے

لاہور(این این آئی)پاکستان کرکٹ ٹیم کے چیف سلیکٹر اور ہیڈ کوچ مصباح الحق سری لنکا کے خلاف ٹی ٹوئنٹی سیریز میں شکست پر برس پڑے اور کہاہے کہ ایسی ٹیم سے ہار جس کے اہم کھلاڑی نہ ہوں، آنکھیں کھولنے کیلئے کافی ہے۔ٹی ٹوئنٹی سیریز میں قومی کرکٹ ٹیم کی سری لنکا کے ہاتھوں شکست پر ہیڈ کوچ نے کہاکہ ہار کبھی اچھی نہیں ہوتی لیکن ایسی ٹیم سے ہار جس کے مین پلیئرز نہ ہوں، آنکھیں کھولنے کیلئے کافی ہے۔انہوں نے کہا کہ سری لنکا ٹیم اچھا کھیلی، جس طرح یارکرز سری لنکا نے کیے ہم نہیں کرسکے، بولنگ

کے شعبے میں بہت کام کرنا ہے، وقار یونس آئے ہیں۔
اس پر کام کریں گے۔انہوں نے کہاکہ شاداب خان محنت کررہا ہے لیکن فارم نہ ہونے کی وجہ سے دباؤ کا شکار ہے، اس کا اعتماد بحال کرنا ہے۔مصباح الحق نے کہاکہ 3 برس صبرکیا، ابھی تو میری پہلی سیریز ہے، سب سری لنکا کو کمزور ٹیم کہہ رہے تھے اور ہمیں کہا جارہا تھا کہ نئے کھلاڑیوں کو کھلائیں لیکن اب سب نے نتیجہ دیکھ لیا؟ انٹرنیشنل کرکٹ میں کسی کو کمزور نہیں کہہ سکتے۔چیف سلیکٹر کے مطابق بابر اعظم نے رنز نہیں کیے، ہم ایکسپوز نہیں ہوئے، ہم نے دیکھنا ہے کہ صرف ایک بیٹسمین پر انحصار نہیں کرنا، ہم اچھا کررہے تھے لیکن اس سیریزمیں اچھا نہیں کر سکے۔



[ad_2]

مصباح الحق نے سری لنکا کیخلاف پہلے ون ڈے کیلئے ٹیم کا انتخاب کر لیا،نام منظر عام پر آگئے

لاہور( آن لائن)پاکستان کے چیف سیلکٹر و کوچ مصباح الحق نے جمعہ کے روز سری لنکا کے خلاف کھیلے جانے والے پہلے ایک روزہ میچ کے لئے ٹیم کا انتخاب کر لیا ہے۔ذرائع کے مطابق قومی ٹیم سلامی بلے باز فخر زمان اور امام الحق کے ساتھ میدان میں اترے گی جبکہ تیسرے اوپنر عابد علی کو سیریز کے آخری میچز میں موقع دیئے جانے کا امکان ہے۔عالمی کپ کے دوران بری طرح فارم سے باہر سلامی بلے باز فخرزمان کو اس سریز میں دوبارہ فارم میں آنے کیلئے بھرپور موقع فراہم کئے جانے کا امکان ہے،فخرزمان نے 2019 میں

8 میچز کھیلے اور ایک نصف سنچری کی بدولت 23 کی
اوسط سے 186 رنز سکور کئے۔دوسری جانب میگا ایونٹ کے دوران امام الحق کی کارکردگی بھی اچھی نہیں رہی اور انہوں نے بھی محض 205 رنز سکور کئے تھے۔مڈل آرڈر میں تجربہ کار بلے باز اور ٹیم کے نائب کپتان بابراعظم اور حارث سہیل ٹیم کو مضبوطی فراہم کریں گے۔قومی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد پانچویں نمبر پر بلے بازی کیلئے آئیں گے جبکہ محمد عامر، وہاب ریاض اور عثمان خان شنواری تیز گیند بازی کی ذمہ داریاں نبھائیں گے۔ٹیم میں موجود2 آل رانڈرز شاداب خان اور عماد وسیم پلیئنگ الیون کا حصہ ہوں گے، محمد حفیظ کی جگہ افتخار احمد کو ٹیم میں شامل کیا جائے گا۔



[ad_2]

مصباح الحق نے سری لنکا کیخلاف پہلے ون ڈے کیلئے ٹیم کا انتخاب کر لیا

لاہور( آن لائن )پاکستان کے چیف سیلکٹر و کوچ مصباح الحق نے جمعہ کے روز سری لنکا کے خلاف کھیلے جانے والے پہلے ایک روزہ میچ کے لئے ٹیم کا انتخاب کر لیا ہے۔ذرائع کے مطابق قومی ٹیم سلامی بلے باز فخر زمان اور امام الحق کے ساتھ میدان میں اترے گی جبکہ تیسرے اوپنر عابد علی کو سیریز کے آخری میچز میں موقع دیئے جانے کا امکان ہے۔عالمی کپ کے دوران بری طرح فارم سے باہر سلامی بلے باز فخرزمان کو اس سریز میں دوبارہ فارم میں آنے کیلئے بھرپور موقع فراہم کئے جانے کا امکان ہے،فخرزمان نے 2019

میں 8 میچز کھیلے اور ایک نصف سنچری کی بدولت 23 کی
اوسط سے 186 رنز سکور کئے۔دوسری جانب میگا ایونٹ کے دوران امام الحق کی کارکردگی بھی اچھی نہیں رہی اور انہوں نے بھی محض 205 رنز سکور کئے تھے۔مڈل آرڈر میں تجربہ کار بلے باز اور ٹیم کے نائب کپتان بابراعظم اور حارث سہیل ٹیم کو مضبوطی فراہم کریں گے۔قومی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد پانچویں نمبر پر بلے بازی کیلئے آئیں گے جبکہ محمد عامر، وہاب ریاض اور عثمان خان شنواری تیز گیند بازی کی ذمہ داریاں نبھائیں گے۔ٹیم میں موجود2 آل رانڈرز شاداب خان اور عماد وسیم پلیئنگ الیون کا حصہ ہوں گے، محمد حفیظ کی جگہ افتخار احمد کو ٹیم میں شامل کیا جائے گا۔



[ad_2]

مصباح الحق پاکستان کی کرکٹ کے گاڈ فادر ہیں ، مکی آرتھر

دبئی( آن لائن ) قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کوچ مکی آرتھر نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ جن کرکٹ کمیٹی کے لوگوں پراعتماد کا اظہار کیا ان سے بات کچھ کہی جاتی تھی اور وہ کرتے کچھ اور تھے۔کریک انفو کو دیئے گئے انٹرویو میں ان کا کہنا تھا کہ کرکٹ کمیٹی کے اجلاس کے دوران میں نے یہ کہا تھا کہ مصباح الحق پاکستان کی کرکٹ کے گاڈ فادر ہیں۔انہوں نے کہا کہ مصباح ایک بہترین شخصیت کے
حامل انسان ہیں اور وہ بحیثیت کوچ بہترین کام کریں گے۔ان کا کہنا تھا کہ کرکٹ کمیٹی کے

ممبران جن میں مصباح الحق اور وسیم اکرم شامل تھے، کے نام میں نے ہی تجویز کئے اور انہوں نے ہی میری مخالفت کر دی۔مکی آرتھر نے کہا کہ عالمی کپ کے بعد بننے والی کرکٹ کمیٹی میں میرے سے بہت سوالات کئے گئے اور چند سوال ایسے تھے جو صرف رائے پر ممبنی تھے اور حقائق سے ان کا کوئی تعلق نہیں تھا۔انہوں نے کہا کہ کمیٹی ممبران نے غلط حقائق کو سامنے رکھتے ہوئے ہی فیصلہ کیا، بہرحال میرا پاکستان کے ساتھ تین سال کا سفر انتہائی شاندار رہا۔پاکستان سپر لیگ کی ٹیم کراچی کنگز کی کوچنگ کے حوالے سے سوال پر ان کا کہنا تھا کہ مجھے اس پر کوئی اعتراض نہیں بلکہ میں اس فرنچائز کے ساتھ اپنا سفر جاری رکھنا چاہوں گا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ تین سال کے سفر میں بہت محنت کی، ون ڈے کرکٹ میں چیمپیئنر ٹرافی جیتی جبکہ ٹی ٹوئنٹی کی رینکنگ میں پہلے نمبر پر آ گئے۔ٹیم کا بہتری کی جانب سفر جاری تھا، امید کرتا ہوں مصباح کی کوچنگ میں بھی ٹیم اچھی کارکردگی دکھائے گی۔



[ad_2]

پاک سری لنکا سیریز قومی ٹیم کے ہیڈ کوچ مصباح الحق اور بولنگ کوچ وقار یونس کا پہلا امتحان ، سابق کپتان وقار یونس پہلے میچ سے قبل کہاں روانہ ہونے کا اعلان کر دیا

اسلام آباد (این این آئی)قومی ٹیم کے بولنگ کوچ وقار یونس پاکستان اور سری لنکا کے درمیان ون ڈے سیریز کے پہلے میچ کے دوران اسٹیڈیم میں موجود نہیں ہوں گے۔پاکستان اور سری لنکا کے درمیان تین ایک روزہ میچوں کی سیریز کا پہلا میچ کراچی کے نیشنل اسٹیڈیم میں 27 ستمبر کو کھیلا جائے گا۔سری لنکا کے خلاف سیریز کے لیے 16 رکنی قومی اسکواڈ کا اعلان بھی ہو چکا ہے اور قومی کھلاڑیوں نے آئی لینڈرز کو جال میں پھنسانے کے لیے محنت بھی شروع کر دی ہے۔پاک سری لنکا سیریز قومی ٹیم کے ہیڈ کوچ مصباح الحق

اور بولنگ کوچ وقار یونس کا پہلا امتحان ہے لیکن پہلے امتحان کے پہلے ’پرچے‘ یعنی
میچ میں ہی بولنگ کوچ ٹیم کے ساتھ موجود نہیں ہوں گے۔پاکستان کرکٹ بورڈ کی جانب سے جاری بیان کے مطابق وقار یونس نے بیٹی کی گریجویشن پاسنگ آؤٹ کی تقریب میں شرکت کے لیے سڈنی جانا ہے اس لیے وہ پاکستان اور سری لنکا کے درمیان پہلے ایک روزہ میچ کے لیے ٹیم کو دستیاب نہیں ہوں گے۔پی سی بی کے مطابق وقار یونس 29 ستمبر کو ہونے والے دوسرے ایک روزہ میچ کے لیے دستیاب ہوں گے اور کراچی میں ٹیم کو جوائن کریں گے۔کرکٹ بورڈ کی جانب سے جاری وضاحتی بیان میں کہا گیا ہے کہ وقار یونس نے اس حوالے سے بولنگ کوچ بننے سے پہلے ہی بورڈ حکام کو آگاہ کر دیا تھا۔



[ad_2]

نوجوان کھلاڑیوں کے پاس مصباح الحق سے سیکھنے کیلئے سنھری موقع ہے ، اسد شفیق

اسلام آباد (این این آئی)قومی کرکٹ ٹیم کے تجربہ کار بلے باز اسد شفیق نے کہا ہے کہ مصباح الحق کو ٹیم کا کوچ تعینات کرنا ایک اچھا فیصلہ ہے جس کے بہت مثبت نتائج برآمد ہوں گے۔ایک انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ کھیل کے ایسے موقع پر جب کھلاڑیوں کو کچھ سمجھ نہیں آ رہی ہوتی وہیں مصباح اپنے ٹھنڈے دماغ سے مشکل کا حل نکال لیتے ہیں۔انہوںنے کہاکہ مصباح الحق کافی تجربہ کار ہیں اور ان کی کپتانی میں ہم نے بہت سے میچز جیتے ہیں، میں نے بحیثیت کھلاڑی ان سے بہت کچھ سیکھا ہے۔انہوں نے

کہا کہ ٹیم میں موجود نوجوان کھلاڑیوں کے پاس مصباح الحق سے سیکھنے کے لئے سنہری موقع ہے۔
اسد شفیق نے کہا کہ مصباح الحق نے تقریباً دنیا کے ہر کونے میں کرکٹ کھیل کر خود کو منوایا ہے اور وہ اپنے اس تجربے سے ٹیم کو بہت فائدہ پہنچا سکتے ہیں۔قائداعظم ٹرافی کے پہلے راؤنڈ میں بلے بازوں کے سلو اسٹرائیک ریٹ کے حوالے سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ میچ کے لئے جو لو پچ استعمال ہوئی وہ بہت سلو تھی جس کی وجہ سے بلے باز زیادہ تیزی سے رن اسکور نہیں کر سکے۔فٹنس کے حوالے سے سوال پر انہوں نے کہاکہ دنیا کے تمام بڑی ٹیموں سے مقابلے کے لئے ہم اپنی فٹنس پر بھرپور کام کر رہے ہیں اور مصباح الحق کا بھی یہی ماننا ہے کہ صرف فٹ پلیئر ہی ٹیم کا حصہ بن سکتا ہے۔



[ad_2]

مصباح الحق نے عمر اکمل اور احمد شہزاد کو اپنے مشن کی تکمیل کیلئے واپس بلایا

لاہور( آن لائن )پاکستان کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ اور چیف سلیکٹر مصباح الحق نے اگلے برس آسٹریلیا میں ہونے والے ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کے لیے وننگ کمبی نیشن کو ہدف بنالیا۔اگلے برس اکتوبر نومبر میں آسٹریلیا میں ہونے والے ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ سے پہلے تمام ٹیمیں ون ڈے کے مقابلے میں زیادہ تر ٹی ٹوئنٹی میچز ہی کھیلیں گی۔یہی معاملہ پاکستان ٹیم کا بھی ہے۔ہیڈ کوچ اور چیف سلیکٹر مصباح الحق نے ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کیلئے وننگ کمبی نیشن
کو اپنا ٹارگٹ بنا لیا ہے۔ ان کا ہدف اس میگا ایونٹ میں کامیابی حاصل کرنا ہے۔ذرائع کا

کہنا ہے کہ احمد شہزاد اور عمر اکمل کو سری لنکا کے خلاف سیریز کیلئے ممکنہ کھلاڑیوں میں اسی لیے شامل کیا گیا ہے کہ انہیں ٹی ٹوئنٹی کرکٹ میں موقع دیا جائے کیونکہ دونوں کھلاڑی جارحانہ انداز میں کھیلنے کیلئے شہرت رکھتے ہیں۔دونوں کرکٹرز کی ون ڈے ٹیم میں شمولیت کا امکان نہیں ہے، ون ڈے ٹیم میں افتخار احمد، محمد رضوان اور عابد علی کو موقع دیا جائے گا۔



[ad_2]

ہیڈ کوچ مصباح الحق نے کھلاڑیوں کی مرغن غذائیں بند کردیں

لاہور( این این آئی) قومی ٹیم کے ہیڈ کوچ و چیف سلیکٹر مصباح الحق کی جانب سے قومی اکیڈمی اور قائد اعظم ٹرافی میچوں میں مرغن کھانوں پر پابندی لگادی گئی ۔نجی ٹی وی کے مطابق مصباح کھلاڑیوں کی کارکردگی کا جائزہ لینے روزانہ قذافی اسٹیڈیم آکر قائد اعظم ٹرافی کے میچ دیکھتے ہیں ۔ذمہ دار ذرائع کا کہنا ہے کہ مصباح الحق نے سب سے پہلے قومی اکیڈمی لاہور میں کھانے کا مینیو تبدیل کرادیا ہے۔ اب اکیڈمی میں کھلاڑیوں کومرغن کھانوں کے بجائے کم گھی والے ایسے کھانے
دیئے جارہے ہیں جن سے ڈائٹ کنٹرول کی جاسکے گی۔اسی طرح

قائد اعظم ٹرافی میں بھی کھلاڑیوں کو مرغن کھانوں کی فراہمی بند کردی گئی ہے۔ قائداعظم ٹرافی کے لئے کھلاڑیوں کو کم گھی والے کھانے دیئے جارہے ہیں جن میں دال چاول، بار بی کیو، پاستا وغیرہ شامل ہیں جبکہ پہلی بار وافر مقدار میں فروٹ بھی دیا جارہا ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ کھلاڑیوں کو ڈائٹ کنٹرول کی خصوصی ہدایت جاری کی گئی ہے اور ماضی کے برعکس کھلاڑیوں کو اچھے ہوٹلوں میں ٹھہرایا گیا ہے۔



[ad_2]

پی سی بی کے اہم عہدوں پر مصباح الحق کی تقرری لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج

لاہور(آن لائن) پی سی بی کے اہم عہدوں پر مصباح الحق کی تقرری کو لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کر دیا گیا۔تفصیلات کے مطابق پاکستان کے سابق کپتان مصباح الحق کو پاکستان کرکت بورڈ میں ہیڈ کوچ اور چیف سلیکٹر کا عہدہ دینے کا اقدام لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کردیا گیا ہے۔درخواست گزار سید علی زاہد بخاری نے مؤقف اختیار کیا ہے کہ مصباح الحق کی تقرری غیر قانونی ہے۔
اور وہ مطلوبہ تجربہ بھی نہیں رکھتے۔درخواست گزار نے عدالت سے استدعا کی ہے کہ مصباح الحق کی تقرری کالعدم قرار دی جائے۔واضح رہے کہ چار سمتبر کو پاکستان کرکٹ بورڈ نے

سابق کپتان مصباح الحق کو تین سال کیلئے قومی کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ اور چیف سلیکٹر مقررکردیا تھا۔ مصباح الحق کو پانچ رکنی پینل نے متفقہ طورپر چیف سلیکٹر اور ہیڈکوچ منتخب کیا تھا۔



[ad_2]