Tag Archives: والی

شہباز شریف اور حمزہ شہباز کیلئے منی لانڈرنگ کرنے والے مبینہ فرنٹ مین کو لاہور ائیرپورٹ سے مانچسٹر جانے والی پرواز سے اتار کر نیب کے حوالے کر دیا گیا

لاہور(نیوز ڈیسک)حمزہ شہباز اور شہباز شریف کے لیے مبینہ طور پر منی لانڈرنگ کرنے والا محمد ساجد نامی فرنٹ مین گزشتہ روزمانچسٹر جانے والی فلائٹ سے آف لوڈ کر لیا گیا، ایف آئی اے امیگریشن نے لاہور سے مانچسٹر جانے والی پرواز 709کو اڑان بھرنے سے رکوا کر مسافر کو آف لوڈ کر دیا۔نیب کی جانب سے مسافر کا دوران امیگریشن پاسپورٹ ہٹ لسٹ میں ڈلوائے جانے
کی وجہ سے مسافر کو آف لوڈ کیا گیا۔ایف آئی اے نے مسافر کو نیب کے حوالے کر دیا گیاجسے بعد ازاں ائیر پورٹ سے نیب آفس منتقل کر دیا گیا۔ایک عہدار نے بتایا

کہ محمد ساجد نامی فرنٹ مین سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف اور ان کے صاحبزادے حمزہ شہباز کے لیے مبینہ طور پر منی لانڈرنگ کرنے میں ملوث ہے اور اس کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ میں شامل ہے۔



لوئر دیر دھماکے میں شہید ہیڈ کانسٹیبل کی جیب سے ملنے والی پرچی میں ایسا کیا تحریر تھا جس نے سب کوآبدیدہ کردیا

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) خیبر پختونخوا پولیس کے کانسٹیبل سیف اللہ جو 4 ستمبر کو لاجبوک میں بیاری کے مقام پر ریموٹ کنٹرول بم دھماکے میں شہید ہو گئے تھے۔اس کی جیب سے ملنے والی پرچی میں اس کے ادھار کا حساب درج تھا۔قرض کی اس پرچی میں تحریر تھا کہ اسے اپنے ساتھی اہلکار کے 60 روپے ادا کرنے ہیں جب کہ ہیڈ کانسٹیبل کے 200 روپے وہ ادا کرچکا تھا۔اس کے علاوہ احمد زیب نامی شخص کے 5 ہزار، افتخار نامی شخص کے 3 ہزار،
سہیل احمد نامی شخص کے 250 روپے، افتخار نامی شخص کے 3ہزار روپے اور ایک

دکاندار فرحان کے 300 روپے لوٹانے کی رقوم بھی تحریر تھی۔ سیف اللہ کے بھائی نے بتایا کہ ان کے بھائی اس وقت شہید ہوئے جب وہ معمول کے گشت پر تھے۔ سیف اللہ کے دوست کا کہنا ہے کہ اس کی ایمانداری، ذمہ داری اور شہادت نے اہلخانہ، گاؤں والوں اور محکمہ پولیس کا سر فخر سے بلند کر دیا ہے۔شہید کانسٹیبل سیف اللہ نے سوگواران میں بیوہ، دو بچے چھوڑے ہیں۔



انصاف کے دعوے ہوا میں اُڑ گئے،وکیل کے مبینہ تشدد کا نشانہ بننے والی لیڈی کانسٹیبل فائزہ گھر والوں سمیت غائب،انتہائی افسوسناک انکشافات‎

فیروزوالا (مانیٹرنگ ڈیسک) فیروز والا میں لیڈی کانسٹیبل فائزہ انصاف نہ ملنے پر دلبرداشتہ، ویڈیو بیان دینے کے بعد گھر کو تالہ لگا کر غائب ہو گئی۔ ایک نجی ٹی وی چینل کی رپورٹ کے مطابق لیڈی کانسٹیبل فائزہ کے گھر پر تالہ لگا ہوا ہے اور وہ اپنے گھر والوں سمیت غائب ہے۔ اس کے بارے میں کسی کو کچھ پتہ نہیں کہ وہ کہاں ہے۔ پولیس بھی اس حوالے سے بے خبر ہے۔
یاد رہے کہ وکیل کے مبینہ تشدد کا نشانہ بننے والی خاتون کانسٹبل فائزہ نواز نے کہا ہے کہ وہ پاکستان کی خواتین کو انصاف دلانے

کے جذبے کے ساتھ پولیس کے محکمے میں آئی تھی۔شیخوپورہ میں وکیل احمد مختار کے مبینہ تشدد کا نشانہ بننے والی خاتون کانسٹبل فائزہ نواز نے ایک انٹرویومیں کہا کہ میں ہمت ہارگئی تو کل کوئی شہری اپنی بیٹی کو پولیس کے شعبے میں کام کرنے نہیں بھیجے گا۔فائزہ نواز نے کہا کہ وکلا کے دباؤ میں آکر ایف آئی آر کمزور کی گئی، وکلا کا دباؤ پولیس والوں کو خاموش رہنے پر مجبور کررہا ہے۔انہوں نے کہا کہ پوری ہمت اور جرات کے ساتھ کیس کی راہ میں آنے والی تمام مشکلات کا سامنا کروں گی۔واضح رہے کہ گزشتہ روز لیڈی کانسٹیبل نے مستعفی ہونے کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ طاقت کے زور پر وکیل نے مجھ پر تشدد کیا، وکلا نے پہلے تو بدکلامی کی، اب تو انتہا کردی ہے۔انہوں نے کہاکہ میرے وکیل بھائی ہی میری کردار کشی کر رہے ہیں، میں ذہنی طور پر بہت زیادہ پریشان اور خوفزدہ ہوں۔فائزہ نواز نے کہا کہ میں پاور فل مافیا کا سامنا نہیں کر سکتی، اپنی عزت اور مستقبل کے حوالے سے بھی بہت پریشان ہوں، میں اس غیر منصفانہ اور ظالم نظام سے دلبرداشتہ ہو چکی ہوں۔ دوسری جانب ڈی پی او شیخوپورہ صلاح الدین غازی نے کہا ہے کہ لیڈی کانسٹیبل فائزہ نواز نے کوئی استعفیٰ نہیں دیا اس نے بس یہ خدشہ ظاہر کیا ہے کہ اگر محکمہ اس کا ساتھ نہیں دے گا تو وہ اپنی ڈیوٹی سے مستعفی ہو جائیں گی۔
لیکن پوری پنجاب پولیس فائزہ نواز کیساتھ کھڑی ہے ایک کانسٹیبل سے لے کر آئی جی پنجاب سب کے سب ہی فائزہ نواز کے ساتھ ہیں اور محکمہ پولیس کبھی بھی اسے تنہا نہیں چھوڑے گی۔ان باتوں کا اظہا ر انہوں نے نویں محرم الحرام کے دن سکیورٹی چیکنگ والی خراسان بر لب نہر داوکے پر کیا۔انہوں نے مزیدکہا کہ عوام، لیڈی و جینٹس کانسٹیبل یا کوئی آفیسر ہو ان کا تحفظ کرنا پنجاب پولیس کی ذمہ داری ہے۔



اینکر مبشر لقمان نے سوشل میڈیا سے مقبول ہونے والی دوخواتین پر اپنے ذاتی جہاز میں سے سامان چرانے کا الزام عائد کردیا‘حیرت انگیز انکشافات

لاہور(این این آئی)مشہور اینکر مبشر لقمان نے سوشل میڈیا سے مقبول ہونے والی دوخواتین پر جہاز میں سے سامان چرانے کا الزام عائد کردیا۔نجی ٹی وی کے مطابق سماجی رابطوں کی ایپ ٹک ٹاک پر ویڈیوز بناکر مقبول ہونے والی خواتین حریم شاہ اور صندل خٹک نے چند روز قبل اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹس پر کچھ ایسی ویڈیوز شیئر کیں جس میں انہیں نامور اینکر مبشر لقمان کے ذاتی جہاز میں دیکھا گیا۔
ان ویڈیوز کے شیئر کرنے کے بعد مبشر لقمان نے ان دونوں خواتین پر جہاز سے قیمتی سامان چوری کرنے کا الزام لگایا۔میڈیا رپورٹس کے مطابق نامور اینکر

مبشر لقمان نے ان دونوں خواتین کے خلاف پولیس کو درج کروائی گئی شکایت میں الزام لگایا کہ فیاض الحسن چوہان کی ایما ء پر یہ دونوں خواتین ان کے جہاز میں آئیں اور جہاز میں موجود قیمتی چیزیں چرالی جن میں لاکھوں روپے مالیت کے کیمرے اور دیگر سامان شامل ہے۔دوسری جانب دونوں خواتین نے ٹک ٹاک پر بنائی ایک ویڈیو میں مبشر لقمان پر الزام لگایا کہ وہ انہیں دھمکیاں دے رہے ہیں۔دونوں خواتین کا اپنی ویڈیو میں کہنا تھا کہ مبشر لقمان نے خود ہمیں اپنے جہاز میں بیٹھنے کی پیشکش کی اور اب جب ویڈیوز سامنے آگئیں تو وہ انہیں ڈیلیٹ کرنے کا مطالبہ کررہے ہیں۔ایک اور ویڈیو میں ان دونوں خواتین نے کہا کہ جو لوگ سمجھ رہے ہیں کہ وہ غلط ہیں تو وہ یہ جان لیں کہ ہم دونوں پولیس کا اپنا موقف بتاچکے ہیں اور اب مبشر لقمان کو ثابت کرنا ہوگا کہ ہم نے چوری کی ہے یا نہیں۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ چور ہم نہیں مبشر لقمان ہیں اور انہیں غصہ صرف اس بات کا ہے کہ ہم نے دنیا کو بتادیا کہ مبشر لقمان کے پاس جہاز موجود ہے کیونکہ لوگ یہ بات نہیں جانتے تھے۔  مبشر لقمان نے سوشل میڈیا سے مقبول ہونے والی دوخواتین پر جہاز میں سے سامان چرانے کا الزام عائد کردیا۔



عورت کی یہی عزت ہے کہ کوئی بھی سر عام تھپڑ مارے اور بری بھی ہوجائے؟مرد وکیل کے تشدد کا نشانہ بننے والی لیڈی کانسٹیبل نے وزیراعلیٰ پنجاب کے ترجمان کو جھوٹا قراردیدیا،افسوسناک انکشافات

لاہور(این این آئی)شیخوپورہ میں مرد وکیل کے تشدد کا نشانہ بننے والی لیڈی پولیس کانسٹیبل نے وزیراعلی پنجاب کے ترجمان ڈاکٹرشہباز گل کی جانب سے شیئر کی گئی تصویر کو جھوٹ پر مبنی قرار د یتے ہوئے ایک مرتبہ پھر انصاف کا مطالبہ کیا ہے۔
سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں وزیراعلی پنجاب کے ترجمان شہباز گل نے ایک فوٹو شیئر کی تھی جس میں خاتون کانسٹیبل ایک ہتھکڑی لگے ملزم کو لے کر جارہی تھی۔اس تصویر کی وضاحت میں شہباز گل نے بتایا کہ شیخوپورہ میں ڈیوٹی پر مامور لیڈی پولیس کانسٹیبل کے ساتھ احمد مختار

نامی وکیل نے بدتمیزی کی اور اسے تھپڑ دے مارا۔انہوں نے مزید بتایا کہ ڈسٹرکٹ پولیس افسر شیخوپورہ نے فوری نوٹس لیتے ہوئے ملزم کو گرفتار کرنے کا حکم دیاتھا۔شہباز گل نے اپنے ٹوئٹ میں تصویر کے ساتھ لکھا کہ ملزم احمد مختار کو اسی لیڈی کانسٹیبل کے ہاتھوں ملزم کو عدالت میں پیش کیا گیا جسے اس نے تھپڑ مارا تھا۔تاہم نجی ٹی وی چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے لیڈی کانسٹیبل کا کہنا تھا کہ ان کی جو تصویر شہباز گل کی جانب سے سوشل میڈیا پر شائع کی گئی وہ جھوٹ پر مبنی ہے۔خاتون کانسٹیبل نے کہا کہ جب انہوں نے درخواست جمع کروائی تو سب انسپکٹر نے ایف آر درج کرتے ہوئے ایک جگہ احمد مختار کی احمد افتخار نام لکھ دیا۔انہوں نے مزید بتایا کہ شک کی بنیاد پر ایف آئی آر ختم کردی گئی اور ملزم احمد مختار کو بری کردیا گیا۔خاتون کانسٹیبل نے سوال اٹھایا کہ کیا اس ملک میں عورت کی یہی عزت ہے کہ اسے کوئی بھی شخص سر عام آکر تھپڑ مارے اور پھر بری بھی ہوجائے؟۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ ان کا انصاف نہ ہی ان کے بیان میں ہے نہ ہی ایف آئی آر میں ہے، انہیں فوری انصاف فراہم کیا جائے۔



انسداد دہشتگردی آپریشن نے پاک فوج کو بہترین جنگ لڑنے والی فوج بنا دیا،جنرل قمر جاوید باجوہ‎

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) انسداد دہشتگردی آپریشن نے پاک فوج کو بہترین جنگ لڑنے والی فوج بنا دیا، یہ بات آرمی چیف قمر جاوید باجوہ نے لاہورکور ہیڈ کوارٹرز کے دورہ کے موقع پر کہی، ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور کے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ٹوئٹ کے مطابق آرمی چیف نے پاکستان رینجرز پنجاب ہیڈ کوارٹرز کا بھی دورہ کیا۔ اس موقع پر آرمی چیف قمر جاوید باجوہ کو بارڈر
کی صورتحال پر تفصیلی بریفنگ دی گئی۔ اس موقع پر آرمی چیف قمر جاوید باجوہ نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ قوم کا

کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی دنیا کیلئے پیغام ہے، انہوں نے مزید کہا کہ انسداد دہشت گردی آپریشن نے پاک فوج کو بہترین جنگ لڑنے والی فوج بنا دیا، آرمی چیف قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ پاک فوج کے جوانوں پر فخر ہے جو قوم کے اعتماد پر پورا اتر رہے ہیں، ہم پرعزم رہیں گے۔



غوری میزائل کے تجربے کے فوراََ بعدآرمی چیف کا جنگ میں فیصلہ کن کردار ادا کرنے والی ”سٹرائیک کور“ کا دورہ

راولپنڈی (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان آرمی چیف قمر جاوید باجوہ کا اسٹرائیک کور کی فارمیشن کا دورہ، آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف کو فارمیشنز کی آپریشنل تیاریوں پربریفنگ دی گئی، اس موقع پر آرمی چیف قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ اسٹرائیک کورکا جنگ میں اہم اور فیصلہ کن کردار ہوتا ہے،
انہوں نے کہا کہ اسٹرائیک کورکی تیاری اورتربیت کا اعلیٰ معیارقابل تحسین ہے، آرمی چیف قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ افسروں اورجوانوں کابلند حوصلہ قابل قدرہے۔آرمی چیف نے جوانوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تیاریوں، تربیتی معیار اور بلند معیار کی وجہ سے اعتماد میں

اضافہ ہوتا ہے۔



بطور قیدی نواز شریف سے ہمدردی لیکن بلیک میلنگ والی ویڈیو عدالت پہنچی تو مریم نواز کیساتھ کیا ہو سکتا ہے ؟اعتزاز احسن نے انتباہ کر دیا

اسلام آباد (این این آئی)پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما اعتزاز احسن نے کہا ہے کہ (ن )لیگ والے کہتے ہیں ہمارے پاس اور بہت ساری ویڈیوز ہیں، (ن )لیگ والے بلیک میل کر رہے ہیں، کیا (ن )لیگ نے بلیک میلنگ کیلئے ایسی ویڈیوز بنا رکھی ہیں؟اگر مریم نواز نے ویڈیو عدالت میں پیش کی تو خود ان پر فرد جرم عائد ہو جائیگی۔
ن لیگ کی ذمہ داری ہے اصلی ویڈیو عدالت میں پیش کرے،بطور قیدی نواز شریف سے ہم دردی ہے لیکن قانون پر عمل ہونا چاہیے،ایک ویڈیو سے جج کے تمام فیصلے ختم نہیں ہو سکتے۔ ایک

انٹرویو میں اعتزاز احسن نے کہا کہ عدالت نے کہا اصلی ویڈیو پیش کی جائے تو اس کا فورنزک ہو سکتا ہے، (ن )لیگ نے تو ویڈیو عدالت میں پیش ہی نہیں کی، اگر مریم نواز نے ویڈیو پیش کی تو خود ان پر فرد جرم عائد ہو جائیگا۔انھوں نے کہا کہ ن لیگ کی ذمہ داری ہے اصلی ویڈیو عدالت میں پیش کرے، ویڈیو بنانے والے کو بھی پیش کرنا (ن )لیگ کی ذمہ داری ہے، ان کے پاس بغیر ایڈٹ شدہ ویڈیو ہے تو بھاگ کر عدالت جانا چاہیے تھا، ویڈیو کاٹ کر پیش کی گئی، یہ تو خود اندر ہو جائیں گے۔پی پی رہنما نے کہا کہ ویڈیو کو 2 ماہ ہو گئے اب تک ن لیگ والے کچھ ثابت نہیں کر سکے، ن لیگ کی قیادت نے نواز شریف کے ساتھ اچھا نہیں کیا، خواجہ حارث ان کے ساتھ بیٹھے ہوتے تو وہ انھیں ایسا نہ کرنے دیتے، بطور قیدی نواز شریف سے ہم دردی ہے لیکن قانون پر عمل ہونا چاہیے۔اعتزاز احسن نے کہا کہ (ن)لیگ نے جسٹس قیوم کے ساتھ بھی ایسا ہی کیا تھا، سیف الرحمان، جسٹس راشد عزیز مرحوم کی آڈیو ٹیپس بھی چلی تھیں، جج کی پرانی ویڈیو عدالت میں ثابت ہو جائے تو حدود کا کیس بن سکتا ہے۔
ایک ویڈیو سے جج کے تمام فیصلے ختم نہیں ہو سکتے۔انہوں نے کہاکہ (ن )لیگ کو ثابت کرنا ہوگا شکار کو پھندے میں لانے کی کوشش نہیں کی، (ن )لیگ نے ویڈیو مہیا نہیں کی تو معاملہ ہائی کورٹ میں نہیں آئے گا، عدالت میں معاملہ جب جائے گا جب یہ ویڈیو اور حلفیہ بیان دیں گے۔پی پی رہنما نے کشمیر کی موجودہ صورت حال پر بھی تبصرہ کیا، انھوں نے کہا کہ مودی نے مقبوضہ کشمیر میں 90 لاکھ کشمیریوں کو قید کر دیا ہے، بھارتی فوج قبضہ گیر بن چکی ہے، عالمی عدالت میں ہم شاید یہ معاملہ نہ اٹھا سکیں لیکن جرائم کے خلاف عالمی عدالت موجود ہے، جرائم کے خلاف عالمی عدالت میں بوسنیا کے قاتل میلا سووچ کا مقدمہ بھی چلا۔



نئے پاکستان کے رنگ نرالے، تاریخ کا انوکھا ترین واقعہ، عید پر چلائی جانے والی سپیشل ٹرین کے ساتھ ایسا ”حادثہ“ ہو گیا کہ مسافروں کے ہوش ہی اُڑ گئے

خانپور (نیوز ڈیسک) پاکستان ریلوے کی تاریخ میں انوکھا ترین واقعہ، انجن بوگیوں کو راستے میں چھوڑ کر آگے چلا گیا، واضح رہے کہ کراچی سے مسافروں کو لے کر راولپنڈی جانے والی خصوصی ٹرین کی تین بوگیاں اچانک الگ ہو گئیں اور مسافروں کو وہیں چھوڑتا ہوا انجن آگے بڑھ گیا، یہ واقعہ سٹی پارک کے نزدیک پیش آیا جہاں تین بوگیاں پیچھے رہ گئیں، ٹرین آدھا کلومیٹر آگے چلی گئی جہاں انہیں معلوم ہوا کہ تین بوگیاں تو پیچھے رہ گئی ہیں
جس کے بعد انجن دوبارہ پیچھے آیا، اس وقت تک مسافروں پریشانی کے عالم میں بوگیوں سے

باہر نکل چکے تھے اور ایک دوسرے سے پوچھ رہے تھے کہ کیا ہوا ہے، اس واقعے کے بارے میں ریلوے ذرائع نے بتایا کہ بوگیوں کو ملانے والا پرزہ ٹوٹ گیا تھا جس کی وجہ سے یہ واقعہ ہوا، اس جوائنٹ کو مرمت کرنے کے بعد ٹرین کو راولپنڈی کے لیے روانہ کر دیا گیا، اس دوران کراچی سے راولپنڈی جانے والی ٹرینوں کی آمد و رفت معطل رہی۔



سراج الحق کشمیر پر بنائی جانے والی نظرثانی کمیٹی کا حصہ بنیں گے یا نہیں ، امیر جماعت اسلامی نے اپنا فیصلہ سنا دیا

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق کا کشمیر پر بنائی جانے والی نظرثانی کمیٹی کا حصہ بننے سے انکار،نجی ٹی وی کے مطابق انہوں نے کہا ہے کہ وہ اپنی پارٹی کے ساتھیوں سے مشاورت کے بعد فیصلہ کریں گے۔
یاد رہے کہ حکومت نے مقبوضہ کشمیر کی تشویش ناک صورتحال پر قائم جائزہ کمیٹی میں توسیع کرکے امیر جماعت اسلامی سراج الحق کو شامل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ذرائع کے مطابق مقبوضہ کشمیر کی آئینی حیثیت کی تبدیلی پر پاکستان کی جانب سے مجوزہ ردعمل ترتیب دینے، سیاسی، سفارتی اور قانون پہلوؤں کا جائزہ لینے اور تجاویز

مرتب کرنے کے لیے 7 رکنی کمیٹی تشکیل دی گئی تھی، اب حکومت نے اس کمیٹی میں توسیع کا فیصلہ کیا ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کی سربراہی میں قائم کمیٹی میں امیر جماعت اسلامی سراج الحق کوشامل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور اس حوالے سے امیر جماعت اسلامی باضابطہ دعوت دی جائے گی۔واضح رہے کہ 6 اگست کو تشکیل دی جانے والی کمیٹی میں وزیر خارجہ، اٹارنی جنرل آف پاکستان، سیکریٹری خارجہ، آزاد کشمیر کے صدر، وزیراعظم اور گلگت بلتستان کے گورنر، ڈی جی آئی ایس آئی، ڈی جی (ملٹری آپریشنز)، ڈی جی آئی ایس پی آر اور وزیر اعظم کے نمائندہ خصوصی احمر بلال صوفی شامل ہیں۔ کمیٹی بھارتی حکومت کے حالیہ اقدام کا جائزہ اور سفارشات پیش کرے گی۔