Tag Archives: گئے

سابق گگلی ماسٹر عبدالقادر (مرحوم) وزیراعظم عمران خان کیلئے لکھی نظم انہیں پیش کئے بغیر ہی دنیا سے رخصت ہو گئے

اسلام آباد(آن لائن) سابق ٹیسٹ کرکٹر گگلی ماسٹر عبدالقادر (مرحوم) وزیراعظم عمران خان کیلئے لکھی نظم انہیں پیش کئے بغیر ہی دنیا سے رخصت ہو گئے ۔رہنما تحریک انصاف عثمان ڈار نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر (مرحوم)عبدالقادر کی وزیراعظم عمران خان کیلئے لکھی ہوئی نظم شیئر کی ۔
عثمان ڈار نے کہا کہ سابق ٹیسٹ کرکٹر گگلی ماسٹر عبدالقادر (مرحوم) نے وزیراعظم عمران خان کیلئے ایک نظم لکھی تھی جو وہ انہیں ملاقات میں سنانا چاہتے تھے اور اس کیلئے وہ مجھ سے مسلسل رابطے میں تھے‘عبدالقادر میرے ساتھ یہ نظم وزیراعظم کو پیش کرنے ہی والے تھے

۔انہوں نے کہا عبدالقادر اور میں بہت جلد وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کرنیوالے تھے۔ مرحوم کی نظم کا متن تھا کہ ’’وزیراعظم عمران خان خوبصورت اور دبنگ شخصیت ہیں،عمران خان کا و یژن سمندر جتنا گہرا ہے، عمران خان عظیم سوچ اور فلسفہ کے مالک ہیں، عمران خان ڈٹ جانیوالے دلیر اور بہادر آدمی ہیں۔عبدالقادر نے نظم کے آخری حصے میں وزیراعظم عمران خان سے خصوصی درخواست کی کہ برائے مہربانی کسی کیساتھ بھی ڈیل نہ کیجئے گا، کپتان جی میں نے اس نظم کے تمام الفاظ خود لکھے ہیں،تمام الفاظ میرے جذبات اور احساسات کے ترجمان ہیں ۔واضح رہے کہ سابق عظیم لیگ سپنر عبدالقادر رواں ماہ 6ستمبر کو دل کا دورہ پڑنے کے باعث 63 برس کی عمر میں انتقال کرگئے تھے۔



کاؤنٹ ڈاؤن شروع، بھارت کی آزاد کشمیر پر حملے کی تیاریاں، ماؤنٹین اسٹرائیک کارپس کے ہزاروں فوجی حرکت میں آ گئے، بھاری ہتھیاروں کی منتقلی

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) بھارت کے سر پر جنگی جنون سوار ہے اور اس نے جنگی ٹینک، بھاری ہتھیار،  ہیلی کاپٹر  اور خصوصی فوجی دستہ ماؤنٹین اسٹرائیک کارپس لائن آف کنٹرول بھیجنے کا اعلان کر دیا ہے، بھارت نے آزاد کشمیر پر حملے کی تیاریاں مکمل کر لی ہیں، پاکستان کی عسکری اور سول قیادت کی طرف سے بارہا اس خدشے کا اظہار کیا جاتا رہا ہے کہ بھارت آزاد کشمیر
پر حملہ کر سکتا ہے، بھارتی وزیر بھی ایٹمی جنگ چھیڑنے کی دھمکیاں دے چکے ہیں، بھارت کے اس عمل کے بعد کھل کر اس کے جنگی عزائم سامنے آ

گئے ہیں۔ پاکستان کی جانب سے عسکری اور سول اعلیٰ قیادت واضح طور پر بھارت کو باور کرا چکی ہے کہ اگر انڈیا حملہ کرے گا تو اسے منہ توڑ جواب دیاجائے گا۔ واضح رہے کہ اس دستے میں پندرہ ہزار فوجی شامل ہیں۔



پختونستان کی باتیں کرنے والے پٹ گئے اور سندھو دیش کی باتیں کرنے والے بھی پٹ جائیں گے، شاہ محمود قریشی کی قومی اسمبلی میں جذباتی تقریر

اسلام آباد (این این آئی)وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے واضح کیا ہے کہ پختونستان کی باتیں کرنے والے پٹ گئے اور سندھو دیش کی باتیں کرنے والے بھی پٹ جائیں گے، سندھ سے متعلق آپ کے ذہن میں کوئی تشویش نہیں ہونی چاہیے ، ملک کی بقاء وفاقی سوچ میں ہے ، آئین کا احترام تھا اور رہے گا ، ہم صوبائی خود مختاری پر آنچ نہیں آنے دینگے۔
سندھ حکومت کو بلا وجہ چھیڑ چھاڑ کا کوئی ارادہ نہیں ،مسئلہ کشمیر پر 58ممالک نے پاکستان کے نقطہ نظر کو مانا ہے یہ سب سے بڑی کامیابی ہے ،اپوزیشن کے

لوگ پروڈکشن آرڈر کے معاملے پر عدالت جانا چاہتے ہیں تو جائیں۔ جمعہ کو قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے انہوں نے اپوزیشن جماعت پاکستان پیپلزپارٹی سے تعلق رکھنے والے سید خورشید شاہ کے بیان پر جواب دیتے ہوئے کہا کہ سندھ سے متعلق آپ کے ذہن میں کوئی تشویش نہیں ہونی چاہیے، سندھ اس ملک کی اکائی ہے، صوبے سے متعلق ماضی کا جو حوالہ دیا گیا، اسے تسلیم کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ سندھ اسمبلی میں جو کردار ادا کیا گیا اس پر کوئی اختلاف نہیں، وفاق کی سوچ ہونی چاہیے، اس ملک کی بقا یہ ہے کہ وفاقی سوچ ہے۔شاہ محمود قریشی نے کہاکہ میں حکومت کی طرف سے ایک پالیسی بیان دے رہا ہوں کہ آئین کا احترام تھا، ہے اور رہے گا، صوبائی خودمختاری پر ہم آنچ نہیں آنے دیں گے، سندھ حکومت کو بلاوجہ چھیڑ چھاڑ کا کوئی ارادہ نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ وزیر قانون کا ذکر کیا گیا اور آرٹیکل 149 کو بہت اچھالا گیا لیکن میں نے خود ان کا وضاحتی بیان پڑھا اور سنا ہے کہ جو مجھ سے منسوب کیا جارہا ہے وہ میں نے نہیں کہا، اس بیان سے متعلق غلط بیانی کی جارہی اور اسے توڑ مروڑ کر پیش کیا جارہا۔
لہٰذا جب ایک وفاقی وزیر نے وضاحت کردی تو آپ کی تشویش ختم ہوجانی چاہیے۔بلاول بھٹو زرداری کو مخاطب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آپ کے سیاسی سفر کی شروعات ہیں، آپ کی جانب سے کسی دباؤ یا جذبات میں بہہ کر سندھو دیش یا پختونستان کی بات کرنا مناسب نہیں ہے، مجھے بلاول بھٹو کی حب الوطنی پر شک نہیں ہے لیکن سیاسی دباؤ میں آکر اس طرح کی بات کرنا آپ کو زیب نہیں دیتا۔
انہوں نے کہا کہ خورشید شاہ نے صحیح کہا کہ پیپلزپارٹی ایک ایسی جماعت ہے جس نے وفاق کو ترجیح دی ہے اور اسی جماعت نے صوبائی تعصب کو دفن کیا ہے، جو جماعت وفاق کی علامت کی بات کرتی ہو اس کے موجودہ چیئرمین سندھ کارڈ استعمال کرنے کی کوشش کریں یہ مناسب نہیں۔شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پاکستان، وفاق، آئین کی بات کرنا سجتی ہیں لیکن اس طرح کی پختونستان کی باتیں کرنا ٹھیک نہیں، پختونستان کی باتیں کرنے والے پٹ گئے اور سندھو دیس کی باتیں کرنے والے پٹ جائیں گے۔
میرا ایمان ہے کہ ایک ایک سندھی پاکستان کا ساتھ دے گا ہمیں ان کی حب الوطنی پر شک نہیں ہے۔پیپلزپارٹی کو مخاطب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آپ یہ تاثر نہ دیں کہ پاکستان کے اندر صوبائی تعصب کی لہر ہے، ایسی کوئی لہر نہیں، میں دعوے سے کہتا ہوں کہ چاہے اردو بولنے والے سندھی ہوں یا سندھی بولنے والے سندھی سب حب الوطن ہیں۔کشمیر کے معاملے پر بات کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہاکہ وضاحت مانگی ہے کہ کسی انٹرویو میں کہہ دیا کہ خدانخواستہ جموں اینڈ کشمیر ہندوستان کا حصہ ہے۔
میں اپنے خطوط، سیکیورٹی کی بحث، اپنے بیان کو آپ کی خدمت میں پیش کر دیتا ہوں۔ انہوں نے کہاکہ آپ مطمئن رہیں میرا موقف وہی ہے جو آپ کا ہے۔ انہوں نے کہاکہ آج ہندوستان جتنی دفاعی پوزیشن میں ہے اتنا ماضی قریب میں دکھائی نہیں دیا۔ انہوں نے کہاکہ ہندوستان کو ہر فورم پر سبکی اٹھانا پڑی۔ انہوں نے کہاکہ اللہ کے فضل سے اٹھاون ممالک نے پاکستان کے موقف کی توثیق کی۔ انہوں نے کہاکہ گزشتہ روز امریکی کانگریس کے چار سینٹرز نے صدر ٹرمپ کو کشمیر کے تشویشناک مسئلے میں مداخلت کے لیئے خط لکھا ہے۔
انہوں نے کہاکہ 17 ستمبر کو پہلی مرتبہ یورپین پارلیمنٹ میں مسئلہ کشمیر اٹھایا جائے گا۔ انہوںنے کہاکہ مسئلہ کشمیر پر دھول پڑی ہوئی تھی آپ کی حکومت نے اجاگر کیا ہے۔ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ 58 ممالک نے پاکستان کے نقطہ نظر کو مانا، یہ سب سے بڑی کامیابی ہے۔انہوں نے اپوزیشن کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ پروڈکشن آرڈر کے معاملے پر آپ عدالت جانا چاہتے ہیں تو عدالت جائیں، تاثر گیا کہ پروڈکشن آرڈر کشمیر کے مسئلے پر فوقیت حاصل کر گیا،ہمیں ایک دوسرے کو ساتھ لیکر چلنا ہے۔

موضوعات:

loading…



مقرر کئے گئے نئے الیکشن کمیشن اراکین سے حلف لینے سے انکار کیوں کیا؟حکومت نے چیف الیکشن کمشنر کے خلاف بڑے اقدام کافیصلہ کرلیا

اسلام آباد (این این آئی) حکومت نے چیف الیکشن کمشنر سردار رضا کے خلاف سپریم جوڈیشل کونسل میں ریفرنس دائر کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ نجی ٹی وی نے ذرائع کے حوالے سے بتایاکہگزشتہ روز اہم اجلاس کے دوران چیف الیکشن کمشنر کے خلاف ریفرنس دائر کرنے کیلیے قانونی مشاورت کی گئی۔ذرائع نے بتایا کہ حکومتی ریفرنس میں سردار رضا کو عہدے سے ہٹانے کی
استدعا کی جائے گی۔واضح رہے چیف الیکشن کمشنرنے حکومت کی جانب سے مقرر کئے گئے نئے الیکشن کمیشن اراکین سے حلف لینے سے انکار کر دیا تھا۔انہوں نے مؤقف اپنایا تھا کہ نئے ممبران کی

تقرری آئین کی خلاف ورزی ہے، جو آئین کی شق 213 اور 214 کے مطابق نہیں ہوئی۔بعد ازاں الیکشن کمیشن کے نئے دو ارکان کی تعیناتی کو اسلام آباد ہائیکورٹ میں چیلنج کر دیا گیا۔



بھارتی فوج کی جانب سے سرحد پر بھاری ہتھیار پہنچانے کی کوشش پاک فوج نے ناکام بنا دی، کئی بھارتی فوجی جہنم واصل اور بھارتی ہتھیار تباہ کر دیے گئے

راولپنڈی (نیوز ڈیسک) پاکستان اور بھارت آرمی کے درمیان لائن آف کنٹرول پر شدید جھڑپیں، پاکستانی فوج نے جواب کارروائی کرتے ہوئے بھارت کے متعدد فوجی جہنم واصل کر دیے، بھارتی فوج کی جانب سے پانڈو سیکٹر پر بھاری ہتھیار پہنچانے کی کوشش بھی پاکستانی فوج نے ناکام بنا دی۔ فوجی ذرائع کے مطابق پاکستان آرمی نے بھارتی ہتھیار تباہ کر دیے ہیں،
پاکستانی افواج نے گزشتہ روز بھارتی افواج کو منہ توڑ جواب دیتے ہوئے نہ صرف ان کے فوجیوں کو جہنم واصل کیا بلکہ ان کی بھاری ہتھیار نصب کرنے کی کوشش بھی ناکام بنا دی۔ بھارت پاک فوج

اور شہری آبادی کو نشانہ بنانے کے لیے بھاری ہتھیار نصب کرنا چاہتا تھا لیکن پاکستانی افواج نے بھرپور جوابی کارروائی کرتے ہوئے ان کی کوشش ناکام بنا دی۔



پاکستان کے مشہور پہلوان محمد زبیر عرف جھارا پہلوان کو ہم سے بچھڑے 28 برس گزر گئے

اسلام آباد( آن لائن )پاکستان کے مشہور پہلوان محمد زبیر عرف جھارا پہلوان کو ہم سے بچھڑے 28 برس گزر گئے۔ جھارا پہلوان نے نامورجاپانی انوکی پہلوان کو زیر کرکے عالمی شہرت حاصل کی، اپنے کیریئر میں 60 سے زائد ملکی اور غیر ملکی مقابلوں میں حصہ لے کر ناقابل شکست رہے۔جھارا پہلوان 1960 میں پاکستان کے مشہور پہلوانوں کے خانوادے میں پیدا ہوئے۔ وہ اسلم پہلوان کے
بیٹے، بھولو پہلوان کے بھتیجے، امام بخش پہلوان کے پوتے اور گاما پہلوان کے نواسے تھے۔ جھارا پہلوان کا پہلا مقابلہ 27 جنوری 1978کو گوگا پہلوان گوجرانوالیہ سے ہوا جس میں وہ فتح

یاب ہوئے۔ 17 جون 1979 کو40 ہزار تماشائیوں کی موجودگی میں نہ صرف جاپان کے مشہور پہلوان انوکی کو زیر کر کے عالمگیر شہرت حاصل کی بلکہ اپنے چچا اکی پہلوان کی شکست کا بدلہ بھی لیا۔فن پہلوانی سے دنیا بھر میں پاکستان کا نام روشن کرنے والے جھارا کی بیوہ اور بچوں کا کوئی پرسان حال نہیں ہے، وہ موہنی روڈ پر ایک بوسیدہ حال گھر میں کسمپرسی کی زندگی گزار رہے ہیں۔ جھارا پہلوان کی بیوہ سائرہ بانو کے مطابق 20 ہزار روپے ماہانہ پر بچوں کا پیٹ پالنے پر مجبور ہوں، ان پیسوں میں بچوں کا کیسے پیٹ پالتی ہوں یہ میں اور میرا خدا ہی جانتا ہے۔ جھارا پہلوان نے اپنی زندگی میں 60 کے لگ بھگ کشتیاں لڑیں اور وہ ہر مقابلے میں فتح یاب ہوئے۔ انہیں فخر پاکستان اور رستم پاکستان کے خطابات بھی عطا ہوئے۔ وہ صرف 31 برس کی عمر میں اپنے خالق حقیقی سے جاملے اور موہنی روڈ لاہور میں بھولو پہلوان کے اکھاڑے میں دفن ہیں۔



ظالم نے اسے پانی بھی نہیں پلایا مارتا ہی رہا، جس ہسپتال میں لے کر گئے وہاں ایمرجنسی ہی نہیں تھی، لاہور میں سکول ٹیچر کے تشدد سے وفات پانے والے حافظ حسنین کے ساتھ کیا ہوا؟ والدہ کے لرزہ خیز انکشافات

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) سکول ٹیچر کے ہاتھوں جان کی بازی ہارنے والے حنین کی والدہ نے اپنے ایک بیان میں روتے ہوئے کہا کہ میں نے اپنے بچے کو صحیح سلامت اپنے ہاتھوں سے سکول بھیجا تھا، ظالم نے اسے اتنا زیادہ مارا، اسے پانی بھی نہیں پلایا وہ مارتا ہی رہا مارتا ہی رہا، کسی طالب علم نے بھی جا کر نہیں پکڑا، بس سبق ہی تو نہیں یاد تھا، یہ لوگ جس ہسپتال میں میرے بچے کو لے کر گئے وہاں ایمرجنسی ہی نہیں تھی،
بچہ ایمبولینس میں پڑا ہوا تھا، میں نے کہا کہ حنین اٹھ جاؤ تمہاری

ماما آئی ہے وہ ہلا ہی نہیں اس کے سانس ختم ہو چکے تھے، وہ مردہ حالت میں تھا، ظالم نے اتنا مارا کہ میرے بچے نے کہا کہ میرے دل کو کچھ ہو رہا ہے سر کہتے ہیں کہ ڈرامے کر رہا ہے، میرے بچے کی شرٹ ہی غائب کر دی، میرے بچے کا سر ہی دیوار پر دے مارا۔ میرا بچہ تو سر پر بالوں کو ہاتھ ہی نہیں لگانے دیتا تھا، وہ کہتا تھا کہ ماما میرے بالوں پر ہاتھ پیار سے کیوں پھیرتی رہتی ہیں، ظالم سر نے بالوں سے پکڑ کر ہی دے مارا میرے بچے کو، سارے دوست اس کے کھڑے تھے لیکن کسی نے ہمت نہیں کی کہ سر ہمیں بھی نہ مارنے لگ جائیں۔ میرے بیٹے کے ساتھ کسی نے دوستی نہ نبھائیں بے چارہ بیس منٹ تک تڑپتا ہی رہا اگر اسے فوراً ہسپتال پہنچا دیتے تو شاید بچ جاتا۔ ایک تھپڑ کافی تھا اتنا مارنے کی کیا ضرورت تھی، اسے مارنے کی اتنی کیا ضرورت تھی، حنین کو مارنے والے کو میرے سامنے لایا جائے میں اس کا گریبان پکڑ کر اس سے پوچھوں کہ میرے بچے نے تیرا کیا بگاڑا تھا۔  دوسری جانب سکول ٹیچر کے ہاتھوں جان کی بازی ہارنے والے حنین کے والد نے بیٹے کی پوسٹ مارٹم رپورٹ میں تشدد کے نشان تک غائب کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے وزیراعظم سمیت چیف آف آرمی سٹاف سے انصاف کا مطالبہ کیا ہے۔تفصیلات کے مطابق رات گئے سکول استاد کے مبینہ تشدد سے جاں بحق ہونے والے حنین بلال کے والد محمد بلال نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ میوہسپتال کے ڈاکٹروں نے اسکول انتظامیہ کی ملی بھگت سے ابتدائی پوسٹ مارٹم رپورٹ میں گڑ بڑ کی،
رپورٹ میں تشدد کے واضح نشان اور سر کی چوٹ تک ظاہر نہیں کی گئی۔مقتول طالب علم کے والد نے الزام عائد کیا کہ ڈاکٹرملزم کامران کوبے گناہ قرار دینے پر تلے ہوئے ہیں۔اس موقع پر انہوں نے کہا کہ اگر حکام انہیں انصاف فراہم نہیں کرسکتے تو انہیں بھی بیٹے کیساتھ ہی دفنا دیں،اگر انہیں انصاف نہ ملا تو وہ دھرنا دیں گے،مقتول طالب علم کے والد کا کہنا تھا کہ وزیراعظم اور آرمی چیف واقعے کا نوٹس لیں۔واضح رہے کہ پانچ ستمبر کو لاہور کے علاقے گلشن راوی میں نجی اسکول میں ٹیچر کے تشدد سے طالب علم انتقال کر گیا، اہل خانہ کا کہنا تھا کہ 16 سال کا حنین ٹیچر کے تشدد سے بے ہو ش ہوا لیکن اسکول انتظامیہ نے اسے اسپتال نہیں بھیجا۔



گگلی ماسٹر عبدالقادر کی پاکستان سے محبت کی ایک اور مثال ! کمرے سے ایسی چیز مل گئی کہ دیکھنے والے دیکھتے ہی رہ گئے

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)گزشتہ دنوں انتقال کرجانے والے لیجنڈری قومی لیگ سپنر عبدالقادر کی پاکستان سے محبت کی ایک اور مثال سامنے آگئی ۔میڈیا رپورٹس کے مطابق ”گگلی ماسٹر“ کے گھر میں ایک کمرے کی ہر چیز پر قومی پرچم بنا ہوا تھا ، اس کمرے کی ٹیبل سے لے کر پردوں تک
اور کرسی سے لے کر تصویروں تک سے پاکستانی پرچم کے رنگ نمایاں ہیں۔ عبدالقادر کے بیٹے سلمان قادر کا کہنا تھا کہ وہ پاکستان کے لیے جیت کے جذبے سے کھیلتے تھے،ملک کی محبت ان کے دل میں سمائی ہوئی تھی،انہوں نے اپنے آخری انٹرویو میں بھی کہا

تھا کہ وہ جہاد کے لیے تیا ر ہیں ۔



پولیس اگر اپنی لیڈی کانسٹیبل کو انصاف نہیں دے سکتی تو پھر یہ عام آدمی کو کیا تحفظ دے گی؟ پنجاب میں دو مہینوں میں پولیس تشدد کے کتنے واقعات پیش آئے؟ ان میں کتنے لوگ مارے گئے؟ صلاح الدین کی ہلاکت نے پولیس کے نظام کو ننگا کرکے رکھ دیا، جاوید چودھری کا تجزیہ

انگریز کے زمانے میں ڈی ایس پی ضلع کا سب سے بڑا افسر ہوتا تھا اور ایک اے ایس آئی پوری تحصیل کو سنبھالتا تھا‘ پولیس کا ایک ہر کارہ پورے گاؤں کو گرفتار کر کے تھانے لے آتا تھا اور کوئی شخص چوں نہیں کرتا تھا‘ کیوں؟ کیوں کہ انگریز یونیفارم کو سٹیٹ سمجھتا تھا‘ کوئی شخص اس یونیفارم کی طرف انگلی بھی اٹھا دیتا تھا تو وائسرائے فوج بھجوا دیتا تھا  اور فوج انگلی اُٹھانے والے کے سارے گاؤں صفحہ ہستی سے مٹا دیتی تھی
لیکن آج سینئر ترین پولیس آفیسرز اور تھانوں اور حوالات کے بریگیڈز کے باوجود

ملک میں پولیس کی کوئی عزت نہیں‘  پولیس اہلکاروں کو تھپڑ بھی پڑ جاتے ہیں اور ڈنڈے بھی‘دوسری طرف پولیس عام لوگوں کو ننگا کرکے الٹا بھی لٹکا دیتی ہے‘ یہ معذوروں کو استری کے ذریعے جلا کر بھی مار دیتی ہے اور غریبوں کی ہڈیاں توڑ کر لاشیں ہسپتال بھی پھینک دیتی ہے‘ یہ ثابت کرتا ہے آپ اگر مضبوط ہیں تو آپ پولیس کی کوئی پرواہ نہیں کرتے اور آپ اگر کمزور ہیں تو پھر پولیس آپ کی کوئی پرواہ نہیں کرتی‘ پولیس کا تشدد اور پولیس پر تشدد اس وقت ملک کا سب سے بڑا ایشو بن چکا ہے، پنجاب میں دو مہینوں میں پولیس تشدد کے 950 واقعات پیش آئے‘جن میں سات لوگ مارے گئے‘ ذہنی معذور صلاح الدین کی پولیس کی حراست میں ہلاکت نے پولیس کے نظام کو ننگا کرکے رکھ دیا‘ پھر لیڈی کانسٹیبل فائزہ نواز کے واقعے نے ایک اور سوال اٹھا دیا کہ پولیس اگر اپنی لیڈی کانسٹیبل کو انصاف نہیں دے سکتی تو پھر یہ عام آدمی کو کیا تحفظ دے گی‘ آئی جی پنجاب عارف نواز نے ان دونوں سوالوں سے بچنے کے لیے آج تھانوں میں پولیس اہلکاروں‘ میڈیا اور عام شہریوں کے موبائل فونز کے استعمال پر پابندی لگا دی‘ کیا یہ فیصلہ پولیس کلچر تبدیل کر دے گا‘ کیا یہ پولیس ریفارمز ہیں‘ پولیس شہریوں کے تحفظ کے لیے بنائی گئی تھی لیکن یہ خوف کی علامت بن گئی‘ پولیس کا امیج کیسے بہتر بنے گا اور کانسٹیبل فائزہ نواز کے واقعے نے ثابت کر دیا ملک میں خواتین محفوظ نہیں ہیں خواہ وہ سرکاری ملازم ہی کیوں نہ ہوں؟



کرپٹ سیاست دانوں نے پیسے واپس کرنے شروع کر دیئے آصف زرداری اور نواز شریف کس کام میں لگ گئے ؟ حیران کن دعویٰ

سکھر(آن لائن)وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ بدعنوان سیاستدانوں نے پیسے واپس کرنے شروع کر دیے ہیں، آصف زرداری کے دوستوں نے پلی بارگین کی کوششیں شروع کر دی ہیں جبکہ نواز شریف کا بھی یہی ارادہ ہے۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ
اگر پاک بھارت جنگ ہوئی دنیا کی سائنسدان انگشت بدنداں ہو جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ مودی نے جو حرکت کی ہے اس پر ہمارے پاس جنگ کے سوا دوسرا راستہ نہیں لیکن ہم پھر بھی مذاکرات کے ذریعے معاملات حل کرنا چاہتے ہیں کیونکہ دوسری صورت میں پورا خطہ تباہی

کی لپیٹ میں آ جائے گا۔وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ مودی نے جو غلطی کی ہے وہ آخری جنگ ہو گی، میں نے پاؤ، آدھا پاؤ والی بات بالکل کی ہے۔انہوں نے کہا کہ عمران خان کی قیادت میں پاکستان کی قسمت بدلے گی، دس ہزار نوکریاں دے دی ہیں، کابینہ نے دس ہزار مزید نوکریوں کی منظوری دے دی ہے، ایک لاکھ لوگوں کو روزگار فراہم کرنے کا ارادہ ہے۔انہوں نے کہا کہ کوریا میں بھی ایک صدر جیل میں ہے دوسراقتل ہو گیا ہے، جو بے ایمان ہو گا، دھوکا دے گا، عوام اور میڈیا اسے نہیں چھوڑیں گے.