Tag Archives: ہائی

وفاقی وزیر برائے سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری کی نا اہلی، اسلام آباد ہائی کورٹ نے اہم قدم اٹھا لیا

اسلام آباد(آن لائن) اسلام آباد ہائی کورٹ نے وفاقی وزیر برائے سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری کے خلاف نااہلی کیس سماعت کے لیے مقرر کردیا ہے۔ چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ جسٹس اطہر من اللہ کیس کی سماعت کریں گے۔رجسٹرار آفس اسلام آباد ہائیکورٹ نے آج کے لیے مقدمات کی فہرست جاری کردی۔درخواست میں وفاقی وزیر پر اثاثے چھپانے کا الزام عائد کیا گیا ہے اور کہا گیا ہے کہ انہوں نے الیکشن کمیشن میں درست معلومات نہیں دیں۔درخواست میں مؤقف
اختیار کیا گیا ہے کہ فواد چوہدری کو 62 ون ایف کے تحت نااہل قرار دیا جائے۔درخواست میں فوادچوہدری، الیکشن

کمیشن، ایف آئی اے اور دیگر کو فریق بنایا گیا ہے۔سمیع اللہ ابراہیم نامی شہری نے وکیل راجہ رضوان عباسی کے توسط سے اسلام آباد ہائیکورٹ میں درخواست دائر کی ہے۔درخواست گزار نے استدعا کی ہے کہ فواد چوہدری کو بطور رکن اسمبلی جو مراعات دی جارہی ہیں واپس لی جائیں اور ان کے خلاف ضابطہ فوجداری کے تحت مقدمہ درج کیا جائے۔



محکمہ موسمیات کی شدیدبارشوں کی پیش گوئی، پولیس کو بھی ہائی الرٹ کردیاگیا

کراچی(این این آئی)محکمہ موسمیات کی شدیدبارشوں کی پیش گوئی، پولیس کو بھی ہائی الرٹ کردیاگیا، تفصیلات کے مطابق آئی جی سندھ ڈاکٹر سیدکلیم امام نے محکمہ موسمیات کیجانب سے کراچی سمیت سندھ کے دیگر آٹھ اضلاع میں شدیدبارشوں / اربن فلڈنگ کے خدشات کے تناظر میں سندھ بھرمیں رین ایمرجینسی کے تحت پولیس کوآئندہ احکامات تک ہائی الرٹ کرتے ہوئے ہدایات جاری کی ہیں کہ
تمام ڈی آئی جیز،ایس ایس پیز متعلقہ ایس ایچ اوزکو امدادی کاموں اورلوگوں کو ہر ممکن ریلیف فراہمی کا ناصرف پابند کرینگے بلکہ اس ضمن میں متعلقہ اداروں کے ساتھ ساتھ باہم روابط کے عمل کوبھی

یقینی بنائیں گے۔انہوں نے ہدایات جاری کیں کہ تیار کردہ رین ایمرجینسی پلان پر اسکی روح کیمطابق عمل درآمد کو صوبائی سطح پریقینی بنایا جائے جبکہ ٹریفک پولیس باالخصوص بارشوں کے باعث زیرآب آجانیوالی سڑکوں کے لئے متبادل روٹس اورانکی تشہیرکو بھی یقینی بنائیں گے۔ان کا کہنا تھا کہ نشیبی علاقوں کی شاہراہوں /گلیوں سے پانی کی نکاسی،سڑکوں پرخراب ہوجانیوالی گاڑیوں کو فوری ہٹاکرسڑکوں کو کلیئرکرنے کے لیئے متعلقہ اداروں کے تعاون سے تمام تراقدامات کو ممکن بنایا جائے۔تمام ایس ایس پیز ضلعی/ٹریفک زونز متعلقہ ایس ایچ اوز/سیکشن افسران کو علاقوں میں موجودگی کاباقاعدہ پابندبنائینگے۔انہوں نے ہدایات جاری کیں کہ تمام ضلعی پولیس کنٹرول رومز/ ٹریفک پولیس کنٹرول ممکنہ بارشوں سے علاقوں کی صورتحال/ریسکیوورکنگ اور سڑکوں پرٹریفک کی صورتحال/ٹریفک اقدامات کی لمحہ بہ لمحہ رپورٹنگ ناصرف نوٹ کرینگے بلکہ رپورٹ برائے ملاحظہ ومزید ضروری اقدامات متعلقہ سپروائزری افسران کو بھی ارسال کرینگے۔



پشاور ہائی کورٹ نے امیر مقام کو بڑا ریلیف فراہم کردیا،حیران کن حکم جاری

پشاور(آن لائن) پشاور ہائی کورٹ نے امیر مقام کمپنی کیخلاف ایف آئی اے کی سفارشات معطل کر دی ہیں اور عدالت نے این ایچ اے کو بھی کارروائی سے روک دیا ہے ۔تفصیلات کے مطابق منگل کے روز پشاور ہائی کورٹ کے جسٹس روح الامین پر مشتمل 2رکنی بنچ نے امیر مقام کمپنی کیخلاف سماعت کی جس میں عدالت نے امیر مقام کمپنی کے خلاف
ایف آئی اے کی سفارشات معطل کر دی اور عدالت نے این ایچ اے کو بھی کاروائی سے روک دیا ،وکیل درخواست گزار نے عدالت کے سامنے موقف دیا تھا کہ یہ ایک انتقامی کارروائی ہے،اس

کا حقیقت سے کوئی تعلق نہیں ۔واضح رہے کہ کیس میں امیر مقام کے بیٹے اشتیاق خان کو گرفتار کیا گیا تھا لیکن بعد میں عدالتی احکامات پر رہائی مل گئی تھی۔



پاکستان سے نکالے جانے والے ہائی کمشنر اجے بساریہ دل برداشتہ ،بھارتی حکومت سے ناقابل یقین درخواست کردی

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)بھارتی حکومت کا پاکستان سے واپس بھیجے گئے ہائی کمشنر اجے بساریہ کو کسی دوسرے ملک میں سفیر لگانے پر غور،بھارتی میڈیا کے مطابق اجے بساریہ نے بھارتی دفتر خارجہ سے درخواست کی ہے کہ انہیں کسی دوسرے ملک میں تعینات کردیا جائے کیونکہ پاکستان کی حکومت نے انہیں نکل جانے کا حکم دیا تھا جس کے بعد ان کی خواہش ہے کہ انہیں اب دوبارہ پاکستان نہ بھیجا جائے۔یاد رہے کہ حکومت پاکستان
نے اجے بساریہ کو 7اگست کو پاکستان سے چلے جانے کا حکم دیا تھاجس کے بعد انہوں نے کوشش کی تھی کہ دونوں ملکوں کے

درمیان سفارتی تعلقات میں کمی نہ کی جائے لیکن پاکستان نے انہیں واضح طور پر مطلع کر دیا تھا کہ وہ پاکستان سے چلے جائیں جس کے بعد وہ 10اگست کو ابوظہبی کے راستے بھارت چلے گئے تھے۔انہیں یکم نومبر 2017کو دو سال کے لئے پاکستان میں بھارتی ہائی کمشنر مقرر کیا گیا تھا ۔



منی لانڈرنگ انکوائری،شہباز شریف مرکزی ملزم قرار لاہور ہائی کورٹ نے تحریری فیصلہ جاری کر دیا

لاہور(اے این این)منی لانڈرنگ انکوائری سے متعلق لاہور ہائی کورٹ نے تحریری فیصلہ جاری کردیا،عدالت نے شہبازشریف منی لانڈرنگ انکوائری میں مرکزی ملزم قراردیدیا۔تفصیلات کے مطابق منی لانڈرنگ انکوائری سے متعلق لاہور ہائی کورٹ نے تحریری فیصلہ جاری کردیا۔
شہبازشریف کو منی لانڈرنگ انکوائری میں مرکزی ملزم نامزد کردیا گیا ہے،ہائیکورٹ نے کہا کہ شہباز شریف منی لانڈرنگ انکوائری میں مرکزی ملزم ہیں، جسٹس علی باقر نجفی اور جسٹس سردار احمد نعیم پر مشتمل بنچ نے شہباز شریف کو مرکزی ملزم قرار دیا،منی لانڈرنگ انکوائری میں حمزہ شہباز،مشتاق چینی،شاہدرفیق سمیت متعددملزمان کوگرفتارکیاگیانیب نے سلمان شہباز، نصرت شہباز سمیت شہباز شریف کے

اہل خانہ کو بھی نامزد کررکھا ہے۔واضح رہے کہ حمزہ شہباز شریف بھی اس کیس میں ملزم ہیں اور اس وقت زیرِ حراست بھی ہیں۔ حمزہ شہبازکولاکھوں ڈالرز کی منتقلی کی تفصیلات سامنے آئی تھیں، نیب نیٹرانزیکشن سے متعلق رپورٹ عدالت میں جمع کروا دی۔ عدالت میں جمع کروائی گئی رپورٹ کے مطابق حمزہ شہبازکی ٹرانزیکشنز 2013ء سے 2017ء کے درمیان کی ہیں اور انہوں نے 7 کروڑ 87 لاکھ 50 ہزار کی رقم تحفے کے طور پر وصول کی۔نیب رپورٹ کے مطابق 2007ء میں محبوب نے 2 جولائی کو1 لاکھ 65 ہزار 965 ڈالرز، ہارون یوسف نے 2 جولائی کو1 لاکھ 99 ہزار 965 ڈالرز اور محمد رفیق نے 6 جولائی کو 1 لاکھ 65 ہزار 925 ڈالر منتقل کیے۔
رپورٹ میں کہا گیا کہ ہارون نے دوبارہ 11 جولائی2007ء کو 1لاکھ 27 ہزار 965 ڈالر، محبوب نے 18جولائی کو 1لاکھ 65 ہزار 980 ڈالرز اور 19 جولائی کو 1 لاکھ 99 ہزار 980 ڈالر منتقل کیے۔نیب نے بتایا کہ 2007ء میں ہی منظوراحمد نے 23 جولائی کو1 لاکھ 67ہزار 980 ڈالرز، ناصر نے 23 ستمبر کو 1لاکھ 65 ہزار 976 ڈالرز، محبوب نے 4 اکتوبر کو 79 ہزار 980 ڈالرز اور 23 اکتوبر کو 1 لاکھ 65 ہزار 980 ڈالرز منتقل کیے۔ منظور احمد نے پھر 5 دسمبر2007ء میں ہی 1 لاکھ 63 ہزار 960 ڈالرز، عرفان نے جنوری 2008 کو 1 لاکھ 65 ہزار 967 ڈالرز جبکہ غلام رسول اور قدیر احمد نے 29 جنوری 2008ء کو 79 ہزار 960 ڈالر منتقل کیے۔ رپورٹ کے مطابق غلام رسول نے دوبارہ یکم فروری 2008ء کو 2 لاکھ 51 ہزار ڈالر کی 2 ٹرانزیکشن کیں جبکہ محمد شکور نے فروری 2008ء میں 1 لاکھ 39 ہزار 55 ڈالر کی رقم منتقل کی۔



جج ارشد ملک نے اعتراف جرم کر لیا، ہائی کورٹ نے اعلامیہ جاری کرتے ہوئے ویڈیو کیس کے فیصلے کاوقت بتا دیا

اسلام آباد (این این آئی)اسلام آباد ہائیکورٹ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ احتساب عدالت کے جج ارشد ملک نے اپنے بیان حلفی اور پریس ریلیز مین اعتراف جرم کر لیا ہے۔چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ جسٹس اطہر من اللہ کے حکم پر قائم مقام رجسٹرار نے نوٹیفکیشن جاری کیا۔اسلام آباد ہائیکورٹ کی جانب سے جاری اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ پریس ریلیز اور بیان حلفی جج میں ارشد ملک کے انکشافات مس کنڈکٹ کا اعتراف ہیں۔اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ جج ارشد ملک نے 7 جولائی کو پریس ریلیز جاری کی،
جج ارشد ملک

نے 11 جولائی کو بیان حلفی بھی جمع کرایا۔نوٹیفکیشن میں کہا گیا کہ جج ارشد ملک بادی النظر میں مس کنڈکٹ کے مرتکب ہوئے لہذا لاہور ہائیکورٹ جج ارشد ملک کے خلاف تادیبی کارروائی کرے۔ دوسری جانب چیف جسٹس پاکستان کی سربراہی میں سپریم کورٹ کا تین رکنی بینچ جج ارشد ملک ویڈیو کیس کا فیصلہ (آج) جمعہ کو سنائے گا، رجسٹرار آفس نے کاز لسٹ جاری کر دی۔سپریم کور ٹ میں جج ارشد ملک ویڈیو اسکینڈل کیس کا فیصلہ چیف جسٹس آف پاکستان کی سربراہی میں تین رکنی بینچ (آج)جمعے کو سنائے گا۔



ہائی پرفارمنس پرفارمنس کیمپ میں شرکت کے لیے 12 ایمرجنگ کرکٹرز طلب

لاہور( این این آئی) ہائی پرفارمنس پرفارمنس کیمپ میں شرکت کے لیے 12 ایمرجنگ کرکٹرز کو نیشنل کرکٹ اکیڈمی میں طلب کرلیا گیا ۔ ان کھلاڑیوں میں عمر خان، موسی خان، حارث رف، ارشد اللہ، زاہد محمود اور محمد جلال شامل ہیںمحمد اسد، محمد عامر حسین، فیصل اکرم، ارشد اقبال، عاکف جاوید اور احسن جمیل مرزا شامل ہیں ۔فاسٹ بولر محمد حسنین کیربئین پریمیر لیگ سے معاہدے کے باعث کیمپ میں شرکت نہیں کریں گے2 ہفتے جاری
رہنے والا کیمپ 23 اگست سے نیشنل کرکٹ اکیڈمی لاہور میں شروع ہوگا ۔کیمپ کا مقصد قومی اسکواڈ کے لیے بیک اپ تیار کرنا

ہے۔ڈائریکٹر اکیڈمیز پی سی بی مدثر نذر کا کہنا ہے کہ کیمپ میں شریک تمام کھلاڑیوں کی مہارت میں نکھار لایا جائے گا۔ہائی پرفارمنس کیمپ کے پہلے مرحلے میں قومی انڈر 16 کرکٹرز کو ٹریننگ دی گئی تھی ۔کیمپ کا دوسرے مرحلہ قومی انڈر 19 کرکٹرز کی این سی اے میں تربیت پر مشتمل رہا تھا۔



ایل او سی پر جارحیت، بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنرپھر دفتر خارجہ طلب،پاکستان نے بڑا مطالبہ کردیا

اسلام آباد(اے این این )پاکستان نے بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کو دفتر خارجہ طلب کرکے بھارتی فوج کی جانب سے لائن آف کنٹرول (ایل او سی)پر بلااشتعال فائرنگ پر احتجاج ریکارڈ کرایا۔دفتر خارجہ سے جاری بیان کے مطابق ترجمان ڈاکٹر محمد فیصل نے بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر گورو اہلووالیا کو دفتر خارجہ طلب کیا ۔
بھارت کی جانب سے گزشتہ روز لائن آف کنٹرول پر سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزی کی شدید مذمت کی۔بھارتی فوج کی گزشتہ روز ایل او سی کے تتہ پانی اور چری کوٹ سیکٹرز پر بلااشتعال فائرنگ سے ناگری گاؤں کے 75 سالہ لعل محمد اور

61 سالہ حسن دین نامی شہری شہید جبکہ 7 سالہ بچہ صدام شدید زخمی ہوا تھا۔ڈاکٹر فیصل کا کہنا تھا کہ بھارتی قابض افواج مسلسل ایل او سی اور ورکنگ بانڈری پر جنگ بندی معاہدے 2003 کی خلاف ورزیاں کر رہی ہیں اور شہری آبادی کو آرٹلری فائر، مارٹر گولوں اور خودکار ہتھیاروں سے نشانہ بنایا اور یہ سلسلہ اب بھی جاری ہے۔انہوں نے کہا کہ بھارت کی جانب سے سیز فائر کی خلاف ورزی میں غیر معمولی اضافے کا سلسلہ 2017 سے جاری ہے اور اس سال ایک ہزار 970 بار خلاف ورزیاں کی گئیں۔ڈاکٹر فیصل کا کہنا تھا کہ بھارت کی مسلسل خلاف ورزیوں سے علاقائی امن و استحکام کو خطرات لاحق ہو رہے ہیں اور یہ خلاف ورزیاں کسی بھی تزویراتی غلطی کا باعث بن سکتی ہیں۔بیان میں کہا گیا کہ ترجمان دفتر خارجہ نے بھارت کو اپنی مسلح افواج کو جنگ بندی کا احترام کرنے کا کہا اور ورکنگ بانڈری اور ایل او سی پر امن کو بحال رکھنے کا پابند بنانے کی ہدایت کی۔
انہوں نے زور دیتے ہوئے کہا کہ بھارت، اقوام متحدہ کے مبصر مشن کو سلامتی کونسل کی قراردادوں میں موجود مینڈیٹ کے مطابق کردار ادا کرنے کی اجازت دے۔خیال رہے کہ بھارتی فوج کی جانب سے لائن آف کنٹرول اور ورکنگ بانڈری پر جنگ بندی معاہدے کی مسلسل خلاف ورزی کی جارہی ہے اور خاص طور پر مقبوضہ جموں اور کشمیر کے حوالے بھارت کے یک طرفہ اقدام کے بعد ایل او سی پر بھارتی خلاف ورزیوں میں مزید اضافہ ہوگیا ہے۔بھارتی فوج ایل او سی پر جدید ہتھیاروں کا استعمال کر رہی ہے جبکہ گزشتہ ہفتے جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے بھارت نے شہری آبادی کو کلسٹر بموں سے بھی نشانہ بنایا تھا۔



ایبٹ آباد میں قومی خواتین کرکٹرز کا ہائی پرفارمنس کیمپ کا باقاعدہ آغاز

لاہور/ایبٹ آباد(این این آئی) قومی خواتین کرکٹرز کے ہائی پرفارمنس کیمپ کا ایبٹ آباد میں باقاعدہ آغاز ہوگیا ہے۔ 30 خواتین کرکٹرز پر مشتمل ہائی پرفارمنس کیمپ 31 اگست تک جاری رہے گا۔ کیمپ کے دوران قومی خواتین کرکٹرز 28 اگست کو کاکول ملٹری اکیڈمی میں ٹریننگ کریں گی۔
کھلاڑیوں میں عالیہ ریاض، عروب شاہ، عائشہ ناز، عائشہ ظفر، بسمعہ معروف، ڈیانا بیگ، فاطمہ ثناء اور حرینہ سجاد شامل ہیں۔اسی طرح ارم جاوید ، جویریہ رؤف، جویریہ ودود، کائنات حفیظ، کائنات امتیاز، ماہم طارق، منیبہ علی، بی بی ناہیدہ اور نجیہہ علوی کو بھی کیمپ میں طلب کیا گیا ہے۔نشرہ سندھو،

نتالیہ پرویز، نداراشد، رامین شمیم، صباء نذیر، سعدیہ اقبال، ثناء میر، سدرہ امین، سدرہ نواز، سوہا فاطمہ، طوبہٰ حسین، عمیمہ سہیل اور وحیدہ اختر بھی ان کھلاڑیوں میں شامل ہیں جنہیں کیمپ میں طلب کیا گیاہے۔کیمپ کے لیے کھلاڑیوں کا انتخاب قومی خواتین کرکٹ ٹیم کی سلیکشن کمیٹی نے کیا ، عروج ممتاز کی سربراہی میں کام کرنے والی 3 رکنی کمیٹی میں اسماویہ اقبال اور مرینہ اقبال شامل ہیں۔عائشہ جلیل مینیجر، ہیڈ کوچ مارک کولز، بیٹنگ کوچ اقبال امام، ٹرینر جمال حسین اور کوچ اے ٹیم شاہد انور بطور آفیشل کیمپ میں شرکت کریں گے،قومی خواتین کرکٹ ٹیم کو بنگلہ دیش اور انگلینڈ کے خلاف سیریز کھیلنا ہے۔قومی خواتین کرکٹ ٹیم کو آئندہ سال آسٹریلیا میں شیڈول آئی سی سی ویمن ٹی ٹونٹی کرکٹ ورلڈکپ میں بھی شرکت کرنا ہے۔اکتوبر میں قومی خواتین اے کرکٹ ٹیم کو سری لنکا کا دورہ کرنا ہے۔چیف سلیکٹر قومی ویمن کرکٹ ٹیم عروج ممتاز کے مطابق ہائی پرفارمنس کیمپ کا مقصد تینوں شعبوں میں کھلاڑیوں کی کارکردگی میں بہتری لانا ہے، قومی خواتین کرکٹرز کیڈٹس کی طرز پر ٹریننگ کرتے ہوئے ملٹری اکیڈمی کاکول میں ایک مکمل دن گزاریں گی۔



اسلام آباد میں بھارتی یوم آزادی کی تقریبات منعقد ہونگی یا نہیں ؟اہم فیصلے کر لئے گئے، جانتے ہیں جاتے جاتے ہائی کمشنر نے سفارتخانے میںکیا کام کیا؟

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)بھارتی ہائی کمشنر اجے بساریہ وطن واپسی کیلئے پروگرام میں تبدیلی کے بعد گزشتہ شب اسلام آباد ایئرپورٹ سے غیر ملکی پرواز کے ذریعےدبئی روانہ ہوگئے، اس سے پہلے انہوں نےاسلام آباد سے بذریعہ موٹروے لاہور روانہ ہونا تھا جہاں سے براستہ واہگہ نئی دہلی جانا تھا، روانگی سے قبل بھارتی ہائی کمشنر نےہائی کمیشن میں ایک غیر رسمی تقریب میں عملے سے خطاب کیا،اس موقع پر ہائی کمیشن کے
عملے نےان سے وابستگی کے جذبات کااظہار کرتے ہوئے انہیں الوداع کیا،دریں اثناء معلوم ہوا ہے کہ بھارت کی یوم آزادی کے حوالہ سے ہائی کمیشن کی جانب

سے اسلام آباد میں تقریبات کومنسوخ کردیاگیا ہے،ذرائع کے مطابق بھارتی ہائی کمیشن 15اگست کواپنے یوم آزادی کی تقریب محدود سطح پر ہائی کمیشن میں ہی کریگا۔یا درہے کہ مقبوضہ کشمیر سے متعلق اقدامات کے بعد پاکستان نے بھارت سے تمام تعلقات منقطع کر دئیے تھے ۔