Tag Archives: ہو

پنجاب کابینہ کی تعداد تاریخ کی ریکارڈ سطح پر پہنچ گئی ،جہازی سائز کی کابینہ کے باوجود کام کچھ نہیں ہو رہا ‘(ن)لیگ نے آئینہ دکھا دیا

لاہور( این این آئی)پنجاب کابینہ کی تعداد 46تک پہنچنے کے بعد تاریخ کی ریکارڈ سطح پر پہنچ گئی ۔رپورٹ کے مطابق ملک اسد کھوکھر کے بطور وزیر حلف اٹھانے کے بعد وزرا ء کی تعداد 36 ہوگئی ہے ۔ اس کے ساتھ کابینہ میں وزیر اعلیٰ کے پانچ خصوصی مشیر بھی شامل ہیں۔عون چوہدری کو ہٹائے جانے کے بعد آصف محمود کو مشیر تعینات کیا
گیا جبکہ ابھی وزیراعلیٰ کے ترجمان کی تعیناتی باقی ہے ۔ذرائع کے مطابق وزیر اعلی کے ترجمان بھی مشیر کے اختیارات استعمال کرتے ہیں۔مسلم لیگ (ن) پنجاب کی سیکرٹری اطلاعات عظمیٰ بخاری نے کہا کہ ہمارے

دور میں اڑتیس رکنی کابینہ پر اعتراض کیا جاتا تھا اور اب پنجاب میں جہازی سائز کی کابینہ ہے مگر کام کچھ نہیں ہو رہا ۔



مجھ سے معیشت پر سوال کب کیا جائے؟ 5 سال بعد معیشت کہاں ہو گی؟ وزیراعظم نے قوم کوبتا دیا

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) حکومت کے پانچ سال مکمل ہو جائیں تب ملک کی معیشت پر سوال کیا جائے، یہ بات وزیراعظم پاکستان عمران خان نے الجزیرہ ٹی وی کو دیے گئے انٹرویو میں کہی، انہوں نے کہا کہ ہماری حکومت میں ماضی کی طرح کوئی بزنس ایمپائر نہیں بنا رہا،وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ یہ نیا پاکستان ہے کیونکہ میگا کرمنل کیسزمیں جس طرح لوگ جیلوں میں ہیں پہلے کبھی نہیں تھے۔
انہوں نے انٹرویو کے دوران کہا کہ 13 مہینوں میں وزیراعظم یا کسی وزیر کے خلاف کرپشن کیس نہیں آیا یہی نیا پاکستان ہے۔وزیراعظم نے کہا کہ

جب وزارت عظمی ٰ کا منصب سنبھالا تو پاکستان پر 90.5 ارب ڈالر کا کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ تھا، ملک کے کرنٹ اکاؤنٹ خسارے میں ہم نے 70فیصد کمی کردی ہے، انہوں نے کہا کہ ہم نے برآمدات بڑھائی ہیں اور درآمدات کم کی ہیں، وزیراعظم نے کہا کہ ملک کی چالیس فیصد بجلی درآمدی ایندھن سے حاصل ہوتی ہے، انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان سٹیل مل آئندہ چار ماہ میں کام کرنا شروع کر دے گی، وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ میری حکومت کے پانچ سال مکمل ہو جائیں تو تب ملک کی معیشت پر سوال کیا جائے، انہوں نے کہا کہ کسی حکومت کی کارکردگی جانچنے کا وقت پانچ سال بعد کا ہوتا ہے، انہوں نے کہا کہ پہلی دفعہ پاکستان میں معیشت کو درست کیا جا رہا ہے، وعدہ کرتا ہوں کہ پانچ سال بعد حکومت چھوڑیں گے تو سرپلس اکنامی ہو گی، وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان کا آئی ایم ایف سے یہ آخری پیکج ہو گا، ہمیں آئی ایم ایف کی جانب سے اخراجات میں کمی اور ریونیو بڑھانے کے علاوہ کچھ نہیں کہا گیا۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان اور بھارت میں روایتی جنگ ہوئی تواختتام ایٹمی جنگ پر ہوگا اورایٹمی جنگ کے نتائج صرف دو ملکوں کے درمیان نہیں بلکہ پوری دنیا میں پھیلیں گے جو بہت بھیانک ہونگے۔وزیراعظم عمران خان نے الجزیرہ ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ ایٹمی جنگ سے بچنے کیلئے عالمی برادری کو کردار ادا کرنا ہوگا
کیونکہ ہم نے اقوام متحدہ میں مسئلہ کشمیر کامعاملہ اٹھایاہے تاکہ جنگ سے بچا سکے لیکن ہندوستان نے پاکستان یا آزاد کشمیر میں کوئی جارحیت کی تو اسکا منہ توڑ جواب دیں گیاورہندوستان کو پتہ ہونا چاہئے کہ پاکستانی قوم ایک ایسی قوم ہے جو خون کے آخری قطرے تک لڑے گی انہوں نے کہا کہ جب بھی دو ایٹمی طاقتیں لڑیں گی تو اختتام اسکا بھیانک ہوگا اور ہمیں سنگین نتائج کا سامنا کرنے پڑے گا اور اس ایٹمی جنگ کے نتائج پوری دنیامیں پھیلیں گے،
انہوں نے کہا کہ مودی نے خطے کے امن کو داؤ پر لگا دیا ہے اور وہ ایک ہٹلر کا کردار ادا کررہے ہیں،ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ بھارت میں الیکشن کے دوران ہی ہمیں اندازا ہوگیا تھا کہ مودی ایک بار پھر برسراقتدار آئیں گے اور ہمیں یہ تشویش تھی کہ بی جے پی کی کامیابی سے ایک بار پھر پاک بھارت تعلقات کشید ہ ہوں گے اور عین مطابق وہی حالات چل رہے ہیں،پاکستان کی ہمیشہ کوشش رہی ہے کہ بھارت کو مذاکرات کی میز پر لائیں اور ہم اس کوشش میں کامیاب بھی رہیں ہیں،مذاکرات میں دونوں ملکوں کے مابین تمام معاملات پر اتفاق ہو جاتا ہے جب کشمیر کی بات آتی ہے تو بھارت بھاگ جاتا ہے،
ہم نے مسئلہ کشمیر کے ایشو کو ہر فورم پر کامیابی سے اٹھایا ہے اور بین الاقوامی ممالک نے مسئلہ کشمیر پر ہمیشہ پاکستان کا ساتھ دیا ہے،اقوام متحدہ سمیت تمام بین الاقوامی اداروں نے مسئلہ کشمیر کے حل لئے بھارت پر دباؤ ڈالا ہے، مسئلے کے حل کیلئے سلامتی کونسل کی قرار داد موجود ہے،دنیا کے تمام اقوام کو چاہیے کہ وہ اس قرار داد پر عملدرآمد کرائیں،عمران خان نے کہا کہ واشنگٹن میں بین الاقوامی ممالک کے سربراہوں کے ساتھ مسئلہ کشمیر بھر پور طریقے سے اٹھاؤں گا،میری تجویز ہے کہ امریکہ،روس اور چین مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے اپنا کردار ادا کر سکتے ہیں،اس حوالے سے ان ممالک کے سربراہوں سے بات کر چکا ہوں اور خوشی ہے کہ امریکہ،چین اور روس نے مسئلہ کے حل کیلئے ہماری تجویز پر کی مکمل حمایت کی ہے جس کا میں ان کا مشکور ہوں۔

موضوعات:

loading…



سابق گگلی ماسٹر عبدالقادر (مرحوم) وزیراعظم عمران خان کیلئے لکھی نظم انہیں پیش کئے بغیر ہی دنیا سے رخصت ہو گئے

اسلام آباد(آن لائن) سابق ٹیسٹ کرکٹر گگلی ماسٹر عبدالقادر (مرحوم) وزیراعظم عمران خان کیلئے لکھی نظم انہیں پیش کئے بغیر ہی دنیا سے رخصت ہو گئے ۔رہنما تحریک انصاف عثمان ڈار نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر (مرحوم)عبدالقادر کی وزیراعظم عمران خان کیلئے لکھی ہوئی نظم شیئر کی ۔
عثمان ڈار نے کہا کہ سابق ٹیسٹ کرکٹر گگلی ماسٹر عبدالقادر (مرحوم) نے وزیراعظم عمران خان کیلئے ایک نظم لکھی تھی جو وہ انہیں ملاقات میں سنانا چاہتے تھے اور اس کیلئے وہ مجھ سے مسلسل رابطے میں تھے‘عبدالقادر میرے ساتھ یہ نظم وزیراعظم کو پیش کرنے ہی والے تھے

۔انہوں نے کہا عبدالقادر اور میں بہت جلد وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کرنیوالے تھے۔ مرحوم کی نظم کا متن تھا کہ ’’وزیراعظم عمران خان خوبصورت اور دبنگ شخصیت ہیں،عمران خان کا و یژن سمندر جتنا گہرا ہے، عمران خان عظیم سوچ اور فلسفہ کے مالک ہیں، عمران خان ڈٹ جانیوالے دلیر اور بہادر آدمی ہیں۔عبدالقادر نے نظم کے آخری حصے میں وزیراعظم عمران خان سے خصوصی درخواست کی کہ برائے مہربانی کسی کیساتھ بھی ڈیل نہ کیجئے گا، کپتان جی میں نے اس نظم کے تمام الفاظ خود لکھے ہیں،تمام الفاظ میرے جذبات اور احساسات کے ترجمان ہیں ۔واضح رہے کہ سابق عظیم لیگ سپنر عبدالقادر رواں ماہ 6ستمبر کو دل کا دورہ پڑنے کے باعث 63 برس کی عمر میں انتقال کرگئے تھے۔



قومی جونیئرگرلز نیٹ بال ٹیم کا تربیتی کیمپ کل شروع ہو گا

اسلام آباد (این این آئی)پاکستان نیٹ بال فیڈریشن کے زیراہتمام قومی جونیئرگرلز نیٹ بال ٹیم کا تربیتی کیمپ (کل) اتوار سے پی ایس بی کوچنگ سنٹر کراچی میں شروع ہو گا، پاکستان نیٹ بال فیڈریشن کے مدثر آرائیں نے بتایاکہ تربیتی کیمپ کے لئے ملک بھر سے 18 کھلاڑیوں کو مدعو کیا گیا ہے جن میں ماہین علیم، زمما سلطانی، مہرین ساگر، زینب شجاعت، مومل خورشید، ایمان رحمان، لائبہ ذوالفقار،شیزین فاطمہ، عرشیہ جومانی، زینب راحیل، اممہ انیب، دینہ زاہد، اقراء شفیق، لائیبہ لاشاری، آمنہ، حور العین اور انسا فضل شامل ہیں۔ انور احمد انصاری کو کیمپ
کمانڈنٹ اور شازیہ یوسف کو

ہیڈ کوچ مقرر کیا گیا۔ نیشا سلطان کو اسسٹنٹ کوچ/کمانڈنٹ جبکہ حنا سامسنگ اور کومل گپسن کو بالترتیب فزیو اور کیئرٹیکر ٹیم کے ہمراہ ہونگی۔ انہوں نے کہا کہ ایشین جونیئر گرلز چمپئن شپ 18 سے 22 اکتوبر تک کٹھمنڈو نیپال میں کھیلی جائیگی اور چمپئن شپ میں 6 ممالک کی ٹیموں کی کھلاڑی حصہ لے لیں گی۔ جن میں پاکستان، میزبان نیپال، سری لنکا، بھارت، بنگلہ دیش اور نیپال شامل ہیں۔ 17 اکتوبر کو چمپئن شپ میں شرکت کرنے والی ٹیموں کی منیجرز میٹنگ ہوگی جس چمپئن شپ کے قوانین اور ڈراز کا اعلان کیا جائے گا۔



پی ٹی آئی کا حال (ق) لیگ سے بھی برا ہو گا،ترقی کا نسخہ اور ٹیم صرف (ن) لیگ کے پاس ہے،ن لیگ حکومت کے سامنے ڈٹ گئی

لاہور(این این آئی)پاکستان مسلم لیگ(ن) کے رہنماؤں نے کہا ہے کہ پاکستان کی سالمیت اورعوام کی خوشحالی کو خطرات کی نذر کر دیا گیا ہے،ملکی سالمیت اور عوامی خوشحالی کے تمام راستے کوٹ لکھپت جیل کی طرف جاتے ہیں،نواز شریف کو دوبارہ وہی ذمہ داری سونپی پڑے گی تو ہی ملک کی ترقی کا سفر دوبارہ شروع ہو گا،عمران خان نے آج تک یونین کونسل نہیں چلائی لیکن سازش کے ذریعے 20کروڑ عوام کا وزیر اعظم بن گیا،ہر بڑے منصوبے پر (ن) لیگ کی مہر لگی ہوئی ہے،
ترقی کا نسخہ اور ٹیم صرف (ن) لیگ کے پاس ہے،ملک نے آگے

بڑھنا اور بہترین معیشت بننے کا قائد کا خواب پورا کرنا ہے تو اس کا راستہ نئے انتخابات ہیں،2020 نئے انتخابات کا سال ہے،پی ٹی آئی کا حال (ق) لیگ سے بھی برا ہو گا،اگر نواز شریف نے ڈیل کرنا ہوتی تو وہ اپنی بیٹی کے ہمراہ جیل کاٹنے لندن سے واپس پاکستان نہ آتے،بیگم کلثوم نواز کی جمہوریت کیلئے گرا نقدر خدمات ہیں،انہوں نے مشکل وقت میں جمہوریت کا علم اٹھایا۔ان خیالات کا اظہار مقررین نے مسلم لیگ (ن) لاہور کے زیر اہتمام قائد اعظم محمد علی جناح اور بیگم کلثوم نواز کی برسی کی مناسبت سے ”قائد اعظم محمد علی جناح کا جمہوری پاکستان“کے موضوع پر منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔سیمینار سے سیکرٹر ی جنرل احسن اقبال،مرکزی رہنما پرویز سینیٹر رشید،سینیٹر آصف کرمانی، لاہو رکے صدر پرویز ملک،،شائستہ پرویز ملک،خواجہ عمران نذیر سمیت دیگرنے بھی خطاب کیا۔احسن اقبال نے کہا کہ آج کا دن ہمارے لئے بہت اہم دن ہے،آج قائد اعظم اور بیگم کلثوم نواز کی برسی کا بھی دن ہے۔بیگم کلثوم نواز جمہوریت کے قافلے کی اہم رہنما اور قائد اعظم کے نظریات کی سچی پیروکار تھیں۔انہوں نے کہاکہ آج ہم اس ملک میں آئین کی بالادستی کی جنگ لڑ رہے ہیں،عوام کی حکمرانی کی بات کرنے والا کوٹ لکھپت جیل میں قید ہے،قائد اعظم نے عوام کی حکمرانی والا نظام حکومت چلانے کے لئے ملک حاصل کیا تھا،آج پاکستان اقتصادی اور معاشی محاذ پر ہچکولے کھا رہا ہے،
ہم نے اس ملک اور اس کی معیشت کو بڑی مشکل سے پیروں پر کھڑا کیا،دنیا بھر کے ادارے ہماری ترقی کی گواہی دے رہے تھے،آج ہماری معاشی ترقی کو ایک سال میں کریش کر کے معاشی تنزلی کا عالمی ریکارڈ بنا دیا گیا،بھارت،بنگلہ دیش اور سری لنکا ہم سے پیچھے تھے لیکن آج وہ ہم سے آگے نکل چکے ہیں۔انہوں نے کہا کہ سی پیک کے منصوبوں سے ترقی اور
لاکھوں روزگار کے مواقع پیدا ہونے تھے لیکن ایک سال میں 10 لاکھ افراد کو بیروزگار کر دیا گیا ہے،ایک سال میں 4 لاکھ مزید افراد کو خط غربت سے مزید نیچے دھکیل دیا گیا ہے۔اس حکومت نے ملکی تاریخ کا سب سے بڑا خسارہ پیدا کر کے ملکی ترقی اورسالمیت کے لئے خطرات پیدا کر دئیے ہیں،ہمیں کہا جاتا تھا کہ 5 سالوں میں 10 ہزار ارب روپے قرضہ لیا،لیکن ہم نے اس سے موٹر ویز اور بجلی کے منصوبے لگائے۔موجودہ حکومت نیایک سال میں ہم سے زیادہ قرضے لے لئے ہیں
لیکن ایک اینٹ بھی نہیں لگائی۔ملک سے سرمایہ اور دماغ بھاگ رہا ہے کیونکہ یہاں لوگوں کو انتقامی کارروائی کا نشانہ بنا کر تذلیل کی جا رہی ہے،اس تنزلی کو نہ روکا گیا اور یہی معمول جاری رہا تو ہمیں اپنی خود مختاری کا سودا کرنا پڑ جائے گا،اقتصادی دیوالیہ پن سے ملکی سلامتی کو خطرات لاحق ہو جاتے ہیں۔ احسن اقبال نے کہا کہ ہمارا فرض ہے کہ ہم اس کا راستہ روکیں اور نواز شریف کی قیادت میں دوبارہ ترقی کا سفر شروع کریں،تاریخ نواز شریف کی بے گناہی اور سچائی کی گواہی دے گی،
نواز شریف کیس کی حقیقت جج ارشد ملک کیس کے ذریعے پوری دنیا کو پتہ لگ چکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم مقبوضہ کشمیر میں مظالم کی بات کیسے کر سکتے ہیں جب ملک میں انصاف کے پیمانے ایسے ہوں،ہمیں کشمیر میں ظلم کی بات تب کرنی چاہیے جب ملک میں بھی مکمل انصاف مل رہا ہو۔مجھے عدلیہ اور نظام عدل پر مکمل یقین ہے کہ نواز شریف سے ہونے والی زیادتی کا ازالہ کیا جائے گا۔نواز شریف کی اہلیہ کینسر کے مرض کے باعث بستر مرگ پر تھیں لیکن انہیں زچ کرنے کے لئے
روزانہ عدالت طلب کیا جاتا رہا،وہ قانون کے سامنے سرنگوں کرتے رہے،اپنی ذات اور رشتوں کی قربانی دے کر قانون کے سامنے سرنڈر کرتے رہے۔ووٹ کو عزت دینے کے لئے نواز شریف بیمار بیوی کو چھوڑ کر سزا کاٹنے بیٹی کے ساتھ ملک واپس آ گئے۔ انہوں نے کہاکہ مجھے یقین ہے کہ مصنوعی دور بہت جلد ٹل جائے گا،نااہل اور ناتجربہ کار دل تو بہلا سکتے ہیں لیکن کار یا جہاز کو چلا نہیں سکتے۔ انہوں نے کہاکہ عمران خان نے آج تک یونین کونسل نہیں چلائی لیکن سازش کے
ذریعے 20کروڑ عوام کا وزیر اعظم بن گیا،اس حکومت کو اتنی مدد ملی لیکن ایک سال سے اس حکومت سے جہاز نہیں اڑ پا رہا،یہ کسی اور طرح کے جہاز اڑا سکتے ہوں گے، معیشت کے جہاز یہ نہیں اڑا سکتے۔ہم نے 5 سالوں میں بڑی سازشوں کا سامنا کیا لیکن ملک کو آگے لے کر گئے۔ ہم نے آپریشن ضرب عضب کیا، دھرنا 2 دیکھا لیکن ملک کو ترقی کی راہ پر ڈالا اور اندھیرے ختم کئے،جتنی ٹھنڈی ہوائیں اس حکومت کو ملیں، ہمیں ملی ہوتیں تو ہم ترقی کے نئے ریکارڈز بنا دیتے،
یہ ایسے بدنصیب ہیں کہ انہوں نے معاشی ترقی کی بجائے تنزلی کی،آئین اور قانون کی بالادستی، نفرت کا خاتمہ اور غربت بیروزگاری اور جہالت کا خاتمہ کر کے ہی قائد کا پاکستان بنایا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ مسلم لیگ (ن) ہی اس ملک کو قائد اعظم کے نظریے کے مطابق بنا اور چلا سکتی ہے۔ہم نے مجموعی طور پر اپنے 9 سالہ دور حکومت میں ایٹمی طاقت بنایا، موٹر ویز بنائیں، بجلی کے منصوبے بنائے،ہر بڑے منصوبے پر (ن) لیگ کی مہر لگی ہوئی ہے،ترقی کا نسخہ اور ٹیم صرف (ن) لیگ کے پاس ہے،سازش کے ذریعے آنے والا یہ ٹولہ بے نقاب ہو چکا،اس ملک نے آگے بڑھنا اور بہترین معیشت بننے کا قائد کا خواب پورا کرنا ہے تو اس کا راستہ نئے انتخابات ہیں،2020 نئے انتخابات کا سال ہے،پی ٹی آئی کا حال (ق) لیگ سے بھی برا حال ہو گا، ان کی ٹکٹ لینے والا کوئی نہیں ہو گا،ان کے قائدین آزاد انتخابات لڑنے پر مجبور ہوں گے،بہت جلد ملک پاکستان مسلم لیگ (ن) کا ہو گا۔سینیٹر پرویز رشید نے کہا کہ تمام لیگی کارکنان نواز شریف اور بیگم کلثوم نواز کی سیاسی جدوجہد سے نہ صرف واقف ہیں بلکہ اس کا طویل عرصے سے حصہ بھی رہے ہیں۔مسلم لیگ (ن) کے قائد نواز شریف کی سالگرہ اور قائد اعظم کا یوم پیدائش،قائداعظم اور بیگم کلثوم کا یوم وفات کا دن ایک ہی ہے،یہ اعزاز کسی جماعت کو حاصل نہیں،پاکستان کو بنانے والا اور سنوارنے والا ایک ہی دن پیدا ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ظلم و جبر کیخلاف انسانی تاریخ کی سب سے بڑی جدوجہد امام حسین علیہ السلام نے کی،امام حسین اور بیگم کلثوم نواز ایک ہی دن دنیا سے رخصت ہوئیں،ہماری نسبتیں عظیم ہستیوں سے ہے جو قیام پاکستان کا سبب بنتی ہیں اور ظلم و جبر کیخلاف جدوجہد کا بھی سبب بنتی ہیں،قید، زنجیریں اور جھوٹے مقدمات کبھی سچ کا راستہ نہیں روک سکتے،یزیدیت محرم الحرام میں دفن ہو جاتی ہے۔ انہوں نے کہاکہ نواز شریف سچائی کا پرچم اٹھائے جلد جیل سے رہا ہوں گے،ہم آج اپنے کسی کارکن کو بھولے نہیں ہیں،ہم نواز شریف کے ساتھ ساتھ مریم نواز، حمزہ شہباز، خواجہ سعد رفیق، شاہد خاقان عباسی، کامران مائیکل، خواجہ سلمان رفیق، رانا ثنا اللہ سمیت سب کو یاد کرتے ہیں،ہمارا راستہ بیگم کلثوم نواز سمیت ان رہنماؤوں والا راستہ ہے،لیگی کارکنوں نے ملک بھر میں مسلم لیگ (ن) کا علم بلند کر رکھا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آج حکومت میں ہمت نہیں کہ بلدیاتی انتخابات کروا سکے کیونکہ انہیں پتہ ہے کہ تحریک انصاف کونسلر کا الیکشن بھی نہیں جیت سکتی۔آج پہلی بار ہوا ہے کہ نواز شریف نے جس کو بھی اپنے نشست پر بٹھایا وہ اپنے قائد کی طرح ثابت قدم رہا،نواز لیگ کے کسی رہنما کے قدم کبھی نہیں لڑکھڑائے،کسی نے امین اور صادق رہنما دیکھنے ہوں تو مسلم لیگ (ن) کے رہنماؤں کو دیکھ لے،جس جماعت کو لیگی کارکنوں جیسے کارکن میسر ہوں اسے نہ کوئی ہرا سکتا ہے اور نہ مٹا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آج ہم قائد اعظم کے شکرگزار ہیں جنہوں نے ہمیں آزادی کی نعمت سے سرفراز کیا،آج ہم اپنے تمام لیگی رہنماوں کی رہائی کے لئے یکسو ہیں،تمام لیگی رہنما اور کارکن نواز شریف کی توقع پر پورا اترے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ آج پاکستان کی سالمیت اورعوام کی خوشحالی کو خطرات کی نذر کر دیا گیا ہے۔ملکی سالمیت اور عوامی خوشحالی کے تمام راستے کوٹ لکھپت جیل کی طرف جاتے ہیں،نواز شریف کو دوبارہ وہی ذمہ داری سونپی پڑے گی تو ہی ملک کی ترقی کا سفر دوبارہ شروع ہو گا،جس کو حکومت دی گئی اس نے ملک کو نالائقی اور نااہلی کے سوا کچھ نہیں دیا،نواز شریف کو دوبارہ لانا ضروری ہے۔پرویز ملک نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم آج کے دن قائداعظم کے وژن کے مطابق پاکستان کو سنوارنے کا عزم ہے،بیگم کلثوم نواز کی جمہوریت کیلئے گرا نقدر خدمات ہیں،بیگم کلثوم نواز نے مشکل وقت میں جمہوریت کا علم اٹھایا،مسلم لیگ (ن) سمیت تمام سیاسی جماعتیں ان کی جمہوری خدمات کو تسلیم کرتی ہیں،قوم قائد اعظم اور کلثوم نواز کی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھے گی۔آصف کرمانی نے کہاکہ قائد اعظم کے بارے میں کچھ کہنا سورج کو چراغ دکھانے کے مترادف ہے۔پاکستان ووٹ کی طاقت اور اس کی عزت کی وجہ سے وجود میں آیا،آج اسی ووٹ کی عزت کی خاطر نواز شریف اور دیگر لیگی رہنما جیلوں میں ہیں۔بیگم کلثوم نواز نیک شہرت، اعلی تعلیم یافتہ اور درد دل رکھنے والی خاتون تھیں،بڑوں سے احترام اور چھوٹوں سے شفقت کے ساتھ ساتھ مشرف آمریت کو للکارنا بیگم کلثوم نواز کا خاص شیوہ تھا،بیگم کلثوم نواز نے مشرف آمریت میں تن تنہا نکل کر اسے جھکنے پر مجبور کر دیا۔نواز شریف اور بیگم کلثوم نواز میں بے پناہ عزت و احترام والا رشتہ تھا، وہ ہمیشہ ذکر خدا میں مصروف رہتی تھیں۔بیگم کلثوم نواز کی بیماری کا بھی کچھ بدبختوں نے تمسخر اڑایا۔ نواز شریف مشاورت پر بے پناہ یقین رکھتے ہیں اور بیگم کلثوم نواز بہترین قیمتی اور نادر مشورے دیتی تھیں۔نواز شریف کو ایسے جرم میں جیل میں پھینک دیا گیا ہے جو انہوں نے کبھی کیا ہی نہیں۔اگر نواز شریف نے ڈیل کرنا ہوتی تو وہ اپنی بیٹی کے ہمراہ جیل کاٹنے لندن سے واپس پاکستان نہ آتے۔آج پاکستان کی ترقی اور خوشحالی کوٹ لکھپت جیل میں قید ہے۔موجودہ دور مشرف کی آمریت سے بھی بدترین دور ہے۔اس حکومت نے ایک سال میں ملک کا ستیاناس کر دیا ہے۔کچھ لوگوں نے اپنے عہدے بچانے کے لئے نواز شریف کا ساتھ چھوڑا ہے۔ایسے لوگوں کو اپنی صفوں سے نکال کر باہر پھینک دیا جائے۔نواز شریف ایک نظریے کا نام ہے جو ملک بھر میں پھیل چکا ہے۔حکمران اب بھی ہوش کے ناخن لیں شیر نہ صرف چوتھی مرتبہ بلکہ بار بار آئے گا۔



حکومت کا تمام جہادی گروپوں کو کنٹرول کرنے کا فیصلہ، اگلی حکومت کس کی ہو گی ؟ حیران کن پیشگوئی سامنے آ گئی

اسلام آباد (این این آئی)حکومت نے تمام جہادی گروپوں کو کنٹرول کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے کہاہے کہ پاکستان میں کسی جنگی سردار یا دہشت گرد کی جگہ نہیں، کسی انتہا پسند کو پاکستان کی سرزمین استعمال کرنے کی اجازت نہیں،حکومت اپوزیشن کے ساتھ کوئی ڈیل نہیں کررہی،حکومت کے ساتھ ڈیل کرنے والے فارغ ہوجائیں گے،حکومت میں جو بھی ڈیل کرے گا
اسلام آباد میں نہیں رہے گا، اگر سب مل کر ملک کیلئے کام نہیں کریں گے تو پچھتائیں گے، مولانا فضل الرحمان سے ڈیل نہیں ہوگی وہ خود ڈھیل ہوجائیں گے،اگلی بار پھر تحریک انصاف کی حکومت آئے گی۔وفاقی

وزیرداخلہ بریگیڈیئر(ر) اعجاز شاہ نے ایک انٹرویو میں کہاکہ نائن الیون سانحہ کے بعد دنیا یکسر بدل گئی،نائن الیون کے بعد عالمی برادری کا ساتھ دینے کیلئے سارے ادارے آن بورڈ تھے۔وزیرداخلہ نے کہاکہ اس ملک کے حکمران طبقے نے ملک کو تباہ کردیا، ملک کی خستہ حالی کا ذمہ دارایک فرد کو قرار نہیں دیا جاسکتا۔ وزیرداخلہ نے کہاکہ حکومت نے تمام جہادی گروپوں کو کنٹرول کرنے کا فیصلہ کیا ہے،پاکستان میں کسی جنگی سردار یا دہشت گرد کی جگہ نہیں۔ بریگیڈیئر(ر) اعجاز شاہ نے کہاکہ کسی انتہا پسند کو پاکستان کی سرزمین استعمال کرنے کی اجازت نہیں ہے۔ وزیرداخلہ نے کہاکہ جیش محمد اور جماعت الدعوہ کے تمام مدارس کو حکومتی تحویل میں لیا گیا، منی لانڈرنگ کرنے والوں کے خلاف حکومت نے بڑا کام کیا۔وزیرداخلہ نے کہاکہ عمران خان نے تنقید کے باوجود منی لانڈرنگ کے خلاف کریک ڈاؤن کیا، آصف زرداری کے خلاف کیس جاندار نہ ہوتا تو وہ جیل میں نہ ہوتے۔ وزیرداخلہ نے کہاکہ آصف زرداری کے خلاف کیس تکڑا ہے، وائٹ کالر کرایم ثابت کرنا مشکل ہوتا ہے، جج ویڈیو کیس میں شریفوں پر فرد جرم عائد ہونی چاہیے تھی۔ وزیرداخلہ نے کہاکہ جج کے خلاف ویڈیو شریف برادران نے بنوائی تھی، حکومت اپوزیشن کے ساتھ کوئی ڈیل نہیں کررہی،
حکومت کے ساتھ ڈیل کرنے والے فارغ ہوجائیں گے۔بریگیڈیئر(ر) اعجاز شاہ نے کہاکہ حکومت میں جو بھی ڈیل کرے گا اسلام آباد میں نہیں رہے گا۔ وزیرداخلہ نے کہاکہ اپوزیشن کے لوگ کمزور دل کی وجہ سے پی ٹی آئی میں آگئے، پی ٹی آئی کو کسی دوسری پارٹی سے کوئی خطرہ نہیں۔ انہوں نے کہاکہ حکومت ستر سال کا کوڑا کرکٹ صاف کررہی ہے، ملک مشکل صورتحال سے گزر رہا ہے۔ بریگیڈیئر(ر) اعجاز شاہ نے کہاکہ پولیس کے نظام کو بہتر بنائیں گے، پر امید ہوں کہ
ملکی مسائل ٹھیک ہوجائیں گے۔ بریگیڈیئر(ر) اعجاز شاہ نے کہاکہ اگر سب مل کر ملک کیلئے کام نہیں کریں گے تو پچھتائیں گے، وزیراعظم کابینہ اجلاس میں ایک گھنٹہ وزرا سے سوالات کرتے ہیں۔ وزیرداخلہ نے کہاکہ وزیراعظم وزرا سے پوچھتے ہیں عام آدمی کیلئے کیا کیا؟ فضل الرحمان عالم دین ہیں انکی عزت کرتا ہوں، مودی نے ہماری شہہ رگ کو پکڑا ہے مولانا صاحب دھرنا دینا چاہتے ہیں۔وزیرداخلہ نے کہاکہ مولانا فضل الرحمان سے ڈیل نہیں ہوگی وہ خود ڈھیل ہوجائیں گے، لوگ فضل الرحمان کے پیچھے نہیں نکلیں گے۔ انہوں نے کہاکہ اگلی بار پھر تحریک انصاف کی حکومت آئے گی۔ انہوں نے کہاکہ اگلے چار سال میں ملک کی حالت بہتر ہوجائے گی۔



بنگلہ دیش، افغانستان اور زمبابوے کے درمیان ٹی 20 سیریز کب سے شروع ہو گی؟ تاریخ کا اعلان کر دیا گیا

ڈھاکہ( آن لائن )بنگلہ دیش، افغانستان اور زمبابوے کی کرکٹ ٹیموں کے درمیان تین ملکی ٹی 20 سیریز (کل) جمعہ سے بنگلہ دیش میں کھیلی جائے گی، شیڈول کے مطابق سیریز کا پہلا میچ (کل) جمعہ کو بنگلہ دیش اور زمبابوے کے درمیان کھیلا جائے گا، 14 ستمبر کو دوسرے میچ میں افغانستان اور زمبابوے کی
ٹیمیں مدمقابل ہوں گی، تیسرا میچ 15 ستمبر کو بنگلہ دیش اور افغانستان کے مابین کھیلا جائے گا، 18 ستمبر کو چوتھے میچ میں بنگلہ دیش اور زمبابوے کی ٹیمیں نبرد آزما ہوں گی، پانچواں میچ 20 ستمبر کو افغانستان اور زمبابوے جبکہ چھٹا اور

آخری میچ 21 ستمبر کو بنگلہ دیش اور افغانستان کے درمیان کھیلا جائے گا۔



بھارتی فوج وحشی ہو گئی۔۔۔!!! کشمیری عزا داروں کو محرم الحرام کا جلوس نکالنے سے روک دیا پوری وادی میں خاردار تاریں بچھادیں ، مزید تازہ دم فوجی دستے تعینات

سری نگر( آن لائن ) مقبوضہ وادی کشمیر میں قابض بھارتی افواج نے مظلوم، بے گناہ اور نہتے کشمیریوں کو نویں محرم الحرام کا جلوس نکالنے اور مجالس عزا منعقد کرنے سے روکنے کے لیے پوری وادی میں مزید خاردار تاریں بچھادی ہیں۔ تازیوں کے جلوسوں کو بھی نکلنے سے روکا گیا ہے اور اس مقصد کے لیے مزید تازہ دم فوجی دستے تعینات کردیے گئے ہیں۔
کرفیو زدہ علاقوں میں مزید سختی کردی گئی ہے۔ مقبوضہ وادی چنار میں مسلسل کرفیو کا آج 36 واں دن ہے۔کرفیو کی عائد مزید سخت پابندیوں کے باوجود مقبوضہ وادی چنار کے مختلف علاقوں

سے موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق عزاداران حسین محرم الحرام کے جلوس نکالنے اور مجالس عزا کے انعقاد کی کوشش کررہے ہیں جس کی وجہ سے بعض مقامات پر جھڑپیں ہوئی ہیں۔گزشتہ روز جب عزاداران حسین نے آٹھویں محرم الحرام کا جلوس نکالنے کی کوشش کی تھی تو انتہاپسندانہ سوچ کی حامل بھارتی حکومت کی ایما پر افواج، پیرا ملٹری فورسز اور پولیس نے مذہبی رسوم کی ادائیگی کے لیے نکلنے والوں کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا تھا، ان پر گولیاں چلائی تھیں، بدنام زمانہ پیلٹ گنز کی فائرنگ کی تھی اور آنسو گیس کے شیل برسائے تھے۔بھارت کی قابض افواج نے اپنی بہیمانہ کارروائیوں سے ایک درجن سے زائد معصوم شہریوں کو شدید زخمی کردیا تھا۔ تصادم کے زیادہ تر واقعات سری نگر کے علاقوں رینا واری اور بڈگام میں پیش آئے تھے۔ذرائع ابلاغ کے مطابق معصوم و نہتے کشمیریوں پر بدترین ریاستی جبر و تشدد کی بھیانک تاریخ رقم کرنے والے سیکیورٹی فورسز کے اہلکاروں نے اپنے بچا کے لیے بلٹ پروف جیکٹس پہنی ہوئی تھیں اور ہیلمٹوں سے سرڈھانپ رکھے تھے تاکہ بے بسی کا شکار کشمیریوں کی جانب سے متوقع پتھرائو سے خود کو محفوظ رکھ سکیں۔
بھارت کی سیکیورٹی فورسز نے سری نگر کے مرکزی علاقے لال چوک اور اس کے اطراف میں انتہائی سخت پابندیاں عائد کرتے ہوئے باقاعدہ ہدایات جاری کی تھیں کہ شہری گھروں سے باہر نہ آئیں۔مودی حکومت میں وفاقی وزیر کے مساوی درجے کے حامل مشیر برائے قومی سلامتی امور اجیت دوول نے اس ضمن میں واضح طور پر کہا تھا کہ قیام امن و امان اور لوگوں کے تحفظ کو یقینی بنانے کے لیے ان پر پابندیوں کا نفاذ ضروری ہے۔ دنیا کی آنکھ میں دھول جھونکنے کے حوالے سے مشہور اجیت دوول نے دعوی کیا تھا کہ صرف دس پولیس اسٹیشنز کی حدود میں محدود نوعیت کی پابندیاں عائد کی گئی ہیں۔



آئندہ 24گھنٹوں میں پاکستان کے کن شہروں میں بارش ہو گی ، محکمہ موسمیات نے لسٹ جاری کر دی

اسلام آباد (این این آئی)محکمہ موسمیات نے کہا ہے کہ آئندہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک کے بیشتر علاقوں میں بارش کا امکان ہے جبکہ بعض مقامات پر موسم گرم اور مرطوب رہے گا۔محکمہ موسمیات کے مطابق ہفتے کے روز راولپنڈی، گوجرانوالہ، لاہور، سرگودھا، فیصل آباد،
مالاکنڈ، ہزارہ، مردان، پشاور، کوہاٹ، بنوں ڈویژن، اسلام آباد اور کشمیر میں کہیں کہیں جبکہ میرپورخاص ڈویژن اور گلگت بلتستان میں چند مقامات پر تیز ہوائوں اور گرج چمک کیساتھ بارش کا امکان ہے۔گزشتہ روز ملک کے بیشتر علاقوں میں موسم گرم اور مرطوب رہا تاہم راولپنڈی، گوجرانوالہ، میرپورخاص، حیدرآباد ڈویژن اوراسلام آباد میں چند

مقامات پر گرج چمک کے ساتھ بارش ہوئی۔سب سے زیادہ بارش منڈی بہائوالدین 76، جہلم 39،راولپنڈی (چکلالہ 38، شمس آباد 13)، حافظ آباد 29، مری 16، اسلام آباد (سیدپور 11، ائیر پورٹ 09، زیروپوائنٹ 06، بوکرہ 03، گولڑہ 02)، چکوال 10،منگلہ 02، سیالکوٹ(ائیر پورٹ02، سٹی01)، سندھ: ڈپلو 17،چھاچرو 08، مٹھی 07، نگرپارکر 05 اور اسلام کوٹ میں 01 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی۔کل ریکارڈ کیے گئے گرم ترین مقامات کیدرجہ حرارت میں تربت 46، سبی 44، دادو، سکھر اور دالبندین میں 43 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔



مقبوضہ کشمیر سے کرفیو ہٹانے کیلئے تمام پاکستانیوں کو کیا کرنا ہو گا ؟ مشعال ملک نے بہترین مشورہ دیدیا

اسلام آباد (این این آئی) حریت رہنما یاسین ملک کی اہلیہ مشعال ملک نے کہا ہے کہ کرفیو ہٹانے کیلئے تمام پاکستانی کشمیریوں کا آواز بنیں۔ جمعہ کو حریت رہنما یاسین ملک کی اہلیہ کا کا یوم دفاع کے موقع ویڈیو پیغام میں کہا کہ پاکستان کا یوم دفاع کشمیریوں کے نام کیا گیا ہے۔
انہوںنے کہاکہ کشمیری قوم نہتی قوم ہے جس کے حریت رہنما جیلوں میں قید ہیں۔ انہوںنے کہاکہ کرفیو ہٹانے کیلئے تمام پاکستانی کشمیریوں کا آواز بنیں۔ انہوںنے کہاکہ کشمیر سے ہندوستان کے فوجیوں کو نکالا جائے اور اقوام متحدہ کشمیریوں کو حق خودارادیت دلوائیں۔ انہوںنے کہاکہ

جمعہ میں خطبے میں کشمیریوں مکے حق میں دعائیں کریں۔ انہوںنے کہاکہ پاکستانی قوم ایک ہو کر یکجہتی کے ساتھ کشمیریوں کا ساتھ دیںاج پوری قوم کشمیریوں کے ساتھ کھڑی ہے ۔ انہوںنے کہاکہ میرے شوہر یاسین ملک تہاڑ جیل کے ڈیتھ سیل میں قید ہیں ،اس کے علاؤہ اور جتنے بھی سیاسی قیدی ہیں پاکستانی قوم انکی آواز بنیں۔ انہوںنے کہاکہ عوام کشمیریوں کے لیے خصوصی دعا کریں۔